اعشاریہ تین فیصد ٹیکس کا نفاذ تاجروں کیلئے قابل قبول نہیں،ابو ذرغفاری

اعشاریہ تین فیصد ٹیکس کا نفاذ تاجروں کیلئے قابل قبول نہیں،ابو ذرغفاری

  

لاہور(وقائع نگار)پاکستان پبلشرز ایسو سی ایشن کے مرکزی رہنماء ابو ذرغفاری نے کہا ہے کہ بنکوں میں رقوم کی منتقلی پر اعشاریہ تین فیصد ٹیکس کا نفاذ تاجروں کیلئے قابل قبول نہیں جس کی تاجر برادری بھر پور مذمت کر تے ہیں گزشتہ روز تاجروں کے اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے شیخ ارشد نے کہا کہ کاروباری اداروں کو ملازمین کی تنخواہوں کی مداور دیگر کاروباری ضروریات کیلئے بنکوں سے کیش کا لین دین کرنا پڑتا ہے اپنی ہی رقم پر بنکوں سے لین دین پر ٹیکس کٹوتی سے تاجر برادری متبادل ذرائع استعمال کرے گی جس کا برا اثر بینکنگ سیکٹر بھی پڑے گا،بنیکوں سے لین دین، چیک جمع کروانے ، ڈرافٹ پے آرڈر بنوانے، ٹی ٹی ،رقوم کی منتقلی اور بنکوں س ے رقوم نکلوانے سمیت صارفین کیلےء بینکنگ سیکٹرکی تمام سہولیات پر ٹیکس عائدہونے سے تاجر برادری اور صنعتکاروں پرمالی بوجھ بڑھ گیا ہے لہذا حکو مت وقت ہو ش کے ناخن لے اور بنکو ں میں ٹرانزیکشن ٹیکس کی مد میں اعشاریہ تین فیصد ٹیکس واپس لے تاکہ تاجر و صنعتکار طبقے کے تحفظات دور ہو سکیں اور معیشت پر منفی اثرات مر تب ہو نے کی بجائے ترقی کی پٹری پر رواں رہ سکے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -