بھارت کے 200مزدوں نے امریکی کمپنی کے خلاف دھوکہ دہی کا مقدمہ جیت لیا

بھارت کے 200مزدوں نے امریکی کمپنی کے خلاف دھوکہ دہی کا مقدمہ جیت لیا
بھارت کے 200مزدوں نے امریکی کمپنی کے خلاف دھوکہ دہی کا مقدمہ جیت لیا

  

واشنگٹن(اے این این)امریکہ کی وفاقی عدالت نے دھوکہ دہی اور ان سے ناجائزطورپر فائدہ اٹھانے کا الزام ثابت ہونے پر تعمیراتی کمپنی سگنل انٹرنیشنل کو 200مزدوروںکو 2ارب روپے ہرجانہ اداکرنے کا حکم دیاہے،امریکہ میں 2005ءمیں آنے والے تباہ کن سمندری طوفان کترینہ میں پائپ لائنوں کی مرمت کیلئے بھارت سے بلائے جانے والے 200ورکر تعمیراتی کمپنی سگنل انٹر نیشنل کیخلاف دھوکہ دہی کے ذریعے ناجائز طورپر فائدہ اٹھانے کے جرم میں 2ارب روپے کا مقدمہ جیت گئے ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق وفاقی عدالت نے رواں سال تعمیراتی کمپنی سگنل انٹرنیشنل کے خلاف مزدوروں کی سمگلنگ کے مقدمے کو یکسوکرتے ہوئے دھوکہ دہی اور ان سے ناجائزطورپر فائدہ اٹھانے کا الزام ثابت ہونے پر 200مزدوروںکو 2ارب روپے ہرجانہ اداکرنے کا حکم دیاہے ۔واضح رہے کہ مزدوروں کی سمگلنگ کے مقدمات میں سے امریکہ کی تاریخ کایہ سب سے بڑا مقدمہ ہے۔

عدالت نے ریاست الاباما میں واقع اس کمپنی کو یہ بھی ہدایت کی ہے کہ وہ بھارتی ورکز سے معافی بھی مانگے گی ۔ کمپنی نے 2005ءکے سمندری طوفان میں تباہ ہونے والے تیل کے ڈھانچوں اور دوسری تنصیبات کی مرمت کیلئے بھارت سے ویلڈر، پائپ فٹردوسرے مزدوروں کو بلایاتھا ۔مزودوروں کا کہناہے کہ ان میں سے ہر ایک مزدور کا بھرتی ہونے اور وکیل پر تقریباً 20بیس لاکھ روپے خرچہ آیاہے ۔اس کے علاوہ کمپنی نے انہیں گرین کارڈ اور اچھی ملازمت کے علاوہ ان کے اور ان کے خاندان کو امریکہ کی مستقل شہریت دلانے کی یقین دہانی بھی کرائی تھی ۔

مزید :

بین الاقوامی -