پنجاب میں کالعدم تنظیموں کے زکوٰۃاور فطرانہ اکٹھا کرنے پر پابندی

پنجاب میں کالعدم تنظیموں کے زکوٰۃاور فطرانہ اکٹھا کرنے پر پابندی

  

 لاہور (جنرل رپورٹر) پنجاب ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ صوبے میں کالعدم تنظیموں کے زکوٰۃ اور فطرانہ اکٹھا کرنے پر پابندی ہوگی اورکسی بھی کالعدم تنظیم کو زکوٰۃ و فطرانہ اکٹھا کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، اسی طرح کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں کا پوری قوت سے قلع قمع کیا جائے گا۔اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ دہشت گردوں و انتہاپسندوں کے سہولت کاروں اور مالی معاونت کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کریک ڈاؤن کیا جائے گا۔گزشتہ روزوزیراعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کی زیرصدارت صوبائی ایپکس کمیٹی کا چھٹا اجلاس منعقد ہوا۔کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل نوید زمان، صوبائی وزیر کرنل (ر) شجاع خانزادہ، چیف سیکرٹری، ڈی جی رینجرز پنجاب میجر جنرل عمر فاروق برکی، جنرل آفیسر کمانڈنگ 10 ڈویژن میجر جنرل سردار طارق امان، انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب، صوبائی سیکرٹری داخلہ اور متعلقہ اعلیٰ سول و ملٹری حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ صوبائی ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب میں انسداد دہشت گردی کیلئے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا گیا اور دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف حالیہ کامیاب کارروائیوں پر پنجاب حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی کو سراہا گیا۔ اجلاس کے دوران نیشنل ایکشن پلان پر مزیدموثر انداز میں تیز رفتاری سے اقدامات پر اتفاق کیا گیا۔ صوبائی ایپکس کمیٹی نے دہشت گردی، انتہاپسندی و فرقہ واریت کے مکمل خاتمے کے بھرپور عزم کا اعادہ کیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے صوبائی ایپکس کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے قومی عزم کا عکاس ہے۔وفاقی حکومت اور صوبائی حکومتیں مکمل یکجہتی کے ساتھ نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائی کر رہی ہیں اور پوری قوم ملک سے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کا عزم کر چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک افواج کا دہشت گردوں کے خلاف کامیاب آپریشن ضرب عضب پوری قوت سے جاری ہے اور اس آپریشن کے ذریعے دہشت گردوں پر کاری ضرب لگائی گئی ہے۔ آپریشن ضرب عضب کے ذریعے وطن اور امن کے دشمنوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جا رہا ہے۔ پاک افواج نے دہشت گردوں کے خلاف جنگ میں جرأت اور بہادری کی نئی تاریخ رقم کی ہے۔پاک افواج، پولیس ، سکیورٹی اداروں کے افسران و اہلکاران کے علاوہ قوم کے بچوں سمیت معاشرے کے ہر طبقے نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں لازوال قربانیاں دی ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ ملک کی بقا کی جنگ ہے اورپوری قوم پاک افواج کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک سے آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جنگ جاری رہے گی۔ ملک کو دہشت گردوں کے ناپاک وجود سے پاک کرکے دم لیں گے اور دہشت گردی کے خلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کو پاکستان میں سر چھپانے کی جگہ نہیں ملے گی اور انہیں کیفر کردار تک پہنچا کر دم لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت انسداد دہشت گردی کے حوالے سے موثر اقدامات کئے ہیں۔ صوبے میں انسداد ددہشت گردی فورس تشکیل دی گئی ہے اور اسے جدید تربیت سے آراستہ کیا گیا ہے۔ وال چاکنگ، لاؤڈ سپیکر کے استعمال، اشتعال انگیز تقاریر اور مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کی اشاعت و تقسیم کی پابندی پر پوری طرح عملدرآمد کیا جا رہا ہے اور اس حوالے سے قانون سازی کرکے سزائیں سخت کی گئی ہیں۔کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل نوید زمان نے کہا کہ دہشت گردوں کے نیٹ ورک، ان کے سہولت کاروں اور مالی معاونت کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی جاری رہے گی۔ اجلاس کے دوران نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب میں انسداد دہشت گردی کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل نوید زمان نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی و پیشہ وارانہ امور اور نیشنل ایکشن پلان کے تحت انسداد دہشت گردی کیلئے اٹھائے گئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیراعلیٰ نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاک افواج کے افسروں اور جوانوں کی عظیم قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

مزید :

صفحہ اول -