سندھ حکومت نے پولیس چیف غلام قادر تھیبو سمیت دیگر عہدیداروں کو عہدے سے فارغ کر دیا

سندھ حکومت نے پولیس چیف غلام قادر تھیبو سمیت دیگر عہدیداروں کو عہدے سے فارغ ...
سندھ حکومت نے پولیس چیف غلام قادر تھیبو سمیت دیگر عہدیداروں کو عہدے سے فارغ کر دیا

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)سندھ حکومت نے ایڈیشنل آئی جی غلام قادر تھیبو کو عہدے سے ہٹا دیاہے اور ان کی جگہ مشتاق مہر کو ایڈیشنل آئی جی تعینات کردیا گیاہے۔نجی ٹی وی دنیا نیوز  کے مطابق سند ھ حکومت نے کرپشن کے الزام والے دیگر عہدیداران کو بھی عہدوں سے ہٹا دیاہے جن میں ڈائریکٹر اینٹی کرپشن آصف اعجاز ،بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈی جی منظور قادر ،ایس بی سی اے کے سینئر افسر شاز شمعون اور ایڈمنسٹریٹر ثاقب سومرو شامل ہیں ۔سندھ حکومت نے 10اضلاع کے ڈی سی او بھی عہدے سے فارغ کر دیئے ہیں جن میں دادو ،جامشورو ،میرپورخاص،سانگھڑ کے شہر شامل ہیں اس کے علاوہ حیدرآباد کے ایڈمنسٹریٹر خالد شیخ بھی شامل ہیں۔

سندھ حکومت کی جانب سے 8اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کو تعینات کر دیا گیاہے ج میں زبیر چنا کو دادو ،زمان ناریجو کو میر پور خاص،وسیم شمشاد کو نشہروفیروز ،احمد علی شاہ کوسجاوجل ،مجاہد حسین کو پنہوارہ کا ڈپٹی کمشنرتعینات کر دیا گیاہے۔ذرائع کے مطابق بلاول بھٹوزرداری کی ڈی جی رینجرزاور کو ر کمانڈر کراچی سے ملاقات میں جو فیصلے لیے گئے ہیں ان پر عملدرآمد کیا جا رہاہے اورملاقات کے بعدوزیراعلیٰ قائم علی شاہ کی زیر صدارت ایپکس کمیٹی کا اجلاس بھی ہوا تھا ۔

نجی ٹی وی کا کہناہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے عہدوں سے ہٹائے گئے افسران پر سنگین کرپشن کے الزامات ہیں،ڈی جی بلڈنگ اتھارٹی منطور قادر پر سات سالوں میں اربوں روپے کی کرپشن کرنے کا الزام ہے ،ان پر کراچی میں غیر قانو نی طور پر بلڈنگ کی اجازت دینا اور مختلف علاقوں کو بلا وجہ کمرشل کرنے کے الزامات ہیں اور شاز شعمون پر زمینوں پر قبضہ کرنے اور کرپشن کے سنگین الزامات ہیں اور ثاقب سومر پر 56کروڑ روپے کی تحقیقات جاری ہیں لیکن وہ ملک سے فرار ہو چکے ہیں۔

سندھ حکومت نے غلام قادر تھیبو کو پولیس چیف کے عہدے سے ہٹا کر چیئرمین اینٹی کرپشن تعینات کر دیا ہے اور ہدایات جاری کیں ہیں کہ نئے تعینات کیے جانے والے افسران فوری طور پر اپنا چارج سنبھالیں ۔ذرائع کا کہناہے کہ ان افسران میں سے ثاقب سومرو اور شاز شمعون ملک سے فرار ہو چکے ہیں ۔

مزید :

کراچی -Headlines -