مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس جاری، 12 مستند شہادتیں موصول ہو گئیں

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس جاری، 12 مستند شہادتیں موصول ہو گئیں
مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس جاری، 12 مستند شہادتیں موصول ہو گئیں

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) شوال کا چاند دیکھنے کیلئے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس اسلام آباد جاری مفتی منیب الرحمان کی زیر صدارت جاری ہے اور اب تک شوال کا چاند نظر آنے کی 12 مستند شہادتیں موصول ہو گئی ہیں۔ کوئٹہ زونل کمیٹی کے سربراہ سید نقیب اللہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شوال کا چاند نظر نہ آنے کا اعلان کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئٹہ سمیت پورے بلوچستان میں مطلع ابر آلود ہے اور گردوغبار کے باعث کہیں سے بھی چاند نظر آنے کی شہادت موصول نہیں ہوئی جس کے بعد زونل رویت ہلال کمیٹی نے عیدالفطر کے اعلان کا معاملہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی پر چھوڑ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق رویت ہلال کمیٹی کے مطابق شوال کا چاند دیکھے جانے کی پہلی شہادت ساہیوال سے موصول ہوئی جس کے بعد سکردو کے علاقے سے بھی چاند دیکھنے کی 4 شہادتیں موصول ہو گئیں۔ ذرائع کے مطابق سبی اور کوہاٹ میں شوال کا چاند نظر آنے سے متعلق مساجد میں اعلانات بھی کئے گئے جس کے بعد ہوائی فائرنگ بھی ہوئی۔ ذرائع کے مطابق اب تک ٹھٹھہ، بدین، حیدر آباد، گوادر، جیونی، کوئٹہ، قلعہ سیف اللہ ، ساہیوال، سکردو، سانگھڑ اور کوہاٹ میں شوال کا چاند دیکھنے سے متعلق شہادیں مرکزی رویت ہلال کمیٹی کو موصول ہو چکی ہیں۔

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا کہنا ہے کہ پورے ملک میں مطلع ابرآلود ہے اس لئے عید الفطر کا چاند نظر آنے یا نہ آنے سے متعلق اعلان میں دیر ہو سکتی ہے۔ زونل کمیٹیوں کی جانب سے 12 مستند شہادیں موصول ہونے کے بعد مرکزی رویت ہلال کمیٹی ان کی جانچ پڑتال میں مصروف ہیں جس کے بعد حتمی اعلان کیا جائے گا۔

مزید :

قومی -