واٹس ایپ کا اس قدر گھناؤنے فعل کیلئے استعمال، تہلکہ خیز سکینڈل منظر عام پر

واٹس ایپ کا اس قدر گھناؤنے فعل کیلئے استعمال، تہلکہ خیز سکینڈل منظر عام پر
واٹس ایپ کا اس قدر گھناؤنے فعل کیلئے استعمال، تہلکہ خیز سکینڈل منظر عام پر

  

نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک) واٹس ایپ کو ہرکوئی سماجی رابطے کی اہم ایپ کے حوالے سے جانتا ہے لیکن بھارت میں جسم فروشی کا دھندہ کرنے والے ایک گینگ کے درندہ صفت افراد نے اسے نوعمر بچیوں کی خریدو فروخت کا ذریعہ بنالیا۔

اخبار ’’انڈیا ٹائمز‘‘ کے مطابق پولیس نے چار لڑکیاں بازیاب کروائی ہیں جنہیں پہلے ہی جسم فروشی کیلئے استعمال کیا جارہا تھا اور اب واٹس ایپ پر ان کی فروخت کیلئے اشتہار دیا گیا تھا۔ لڑکیوں میں سے دو کا تعلق ریاست جھاڑ کھنڈ سے ہے اور انہیں دارالحکومت دہلی میں بازیاب کروایا گیا۔ پولیس نے ریاست بہار سے تین ملزمان کو بھی گرفتار کرلیا ہے جو مبینہ طور پر واٹس ایپ پر لڑکیوں کو بیچنے کی کوشش کررہے تھے۔ غازی آباد پولیس کے ڈی ایس پی ران وجے سنگھ نے بتایا کہ دو لڑکیوں کا تعلق جھاڑ کھنڈ، ایک کا غازی آباد اور ایک کا دہلی سے ہے۔

مزید پڑھیں:واٹس ایپ پر ”فراڈیوں“ سے تنگ افر اد کیلئے خوشخبری

غازی آباد سے تعلق رکھنے والی لڑکی کی عمر 13 سال ہے اور وہ گھر سے فرار ہوکر دہلی پہنچ گئی تھی۔ پولیس کے مطابق دہلی سٹیشن پہنچتے ہی اسے بردہ فروشوں نے پکڑلیا تھا۔ جسم فروشی کا دھندہ کرنے والے گینگ نے لڑکیوں کی قابل اعتراض تصاویر بنا کر واٹس ایپ پر ممکنہ گاہکوں کو بھیجی تھیں۔ پولیس کے مطابق لڑکیوں کو 40 ہزار سے ڈیڑھ لاکھ بھارتی روپے میں فروخت کرنے کی کوشش کی جارہی تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -