وہی ہوا جس کا ڈر تھا، 3 دن تک وارننگ جاری کرنے کے بعد چین نے فلپائن کے خلاف بڑا قدم اٹھالیا، پاکستان کے پڑوس میں سنگین خطرہ پیدا ہوگیا

وہی ہوا جس کا ڈر تھا، 3 دن تک وارننگ جاری کرنے کے بعد چین نے فلپائن کے خلاف بڑا ...
وہی ہوا جس کا ڈر تھا، 3 دن تک وارننگ جاری کرنے کے بعد چین نے فلپائن کے خلاف بڑا قدم اٹھالیا، پاکستان کے پڑوس میں سنگین خطرہ پیدا ہوگیا

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) ہیگ میں واقع عالمی عدالت کے بحرجنوبی چین کے مقدمے میں چین کے خلاف فیصلے کے بعد جس چیز کا ڈر تھا بالآخر وہی ہو گئی۔ چین نے فلپائن کے خلاف انتہائی اقدام اٹھاتے ہوئے بحرجنوبی چین سے اس کے ماہی گیروں کو نکال باہر کیا ہے اوران سمندری حدود میں فلپائن سمیت کسی بھی ملک کے اشتعال انگیز اقدامات کا فیصلہ کن جواب دینے کا اعلان کر دیا ہے۔ جاپان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق چین کی طرف سے یہ اعلان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب دنیا اس پر عالمی عدالت کا فیصلہ قبول کرنے کے لیے دباﺅ ڈال رہی ہے۔

’اس ملک نے ایٹمی دھماکہ کرنے کی تیاریاں مکمل کرلیں‘ ایک خبر جس نے دنیا کو پریشان کردیا

رپورٹ کے مطابق عین جس روز چین کے طرف سے اشتعال انگیزی کا حتمی جواب دینے کا اعلان ہوا اسی روز چینی کوسٹ گارڈ نے بحرجنوبی چین میں داخل ہونے والے فلپائنی ماہی گیروں کو بھیڑبکریوں کی طرح ہانکتے ہوئے زبردستی ان متنازعہ سمندری حدود سے نکال دیا۔ چین کے خلاف عالمی عدالت جانے والا فلپائن ایک طرف چین سے عالمی عدالت کے فیصلے کا احترام کرنے کا مطالبہ کر رہا ہے اور دوسری طرف کشیدگی کو کم کرنے کا خواہشمند بھی ہے۔ فلپائنی حکام کا کہنا ہے کہ وہ اپنے سابق صدر فیڈل ریموس کواس معاملے پر مذاکرات کے لیے چین بھیجیں گے۔

جاپان ٹائمز کے مطابق چینی وزارت خارجہ کے ترجمان لو کنگ کا کہنا تھا کہ ”اگر کسی بھی ملک نے چین کے سکیورٹی مفادات کے خلاف اشتعال انگیز اقدام اٹھانے کی کوشش کی تو ہم اس کے جواب میں فیصلہ کن اقدام اٹھائیں گے۔“ واضح رہے کہ چین لگ بھگ پورے بحرجنوبی چین کی ملکیت کا دعویٰ کرتا ہے جبکہ فلپائن، ویت نام و دیگر کئی ممالک بھی ان سمندری حدود کی ملکیت کے دعویدار ہیں۔یہ سمندری حدود فوجی وتجارتی اعتبار سے انتہائی اہمیت کی حامل ہیں۔ اس سمندر کے ذریعے سالانہ 5ٹریلین ڈالر کی تجارت ہوتی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -