اپنے بیٹے کے جنازے پر 71 سالہ خاتون کی نظر 17سالہ نوجوان پر پڑگئی، پھر کیا ہوا؟ جان کر آپ کا منہ بھی کھلا کا کھلا رہ جائے گا

اپنے بیٹے کے جنازے پر 71 سالہ خاتون کی نظر 17سالہ نوجوان پر پڑگئی، پھر کیا ہوا؟ ...
اپنے بیٹے کے جنازے پر 71 سالہ خاتون کی نظر 17سالہ نوجوان پر پڑگئی، پھر کیا ہوا؟ جان کر آپ کا منہ بھی کھلا کا کھلا رہ جائے گا

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) امریکی ریاست ٹینسی سے تعلق رکھنے والی معمر خاتون المیدا ایرل کے جواں سال بیٹے کی حال ہی میں وفات ہوگئی تو ان کے عزیز و اقارب سمجھ رہے تھے کہ وہ اب باقی عمر بیٹے کے غم میں آنسو بہاتے ہوئے گزاریں گی، مگر بڑی بی نے بیٹے کے جنازے کے دن ہی ایسا گل کھلا دیا کہ جس نے سنا شرما کر رہ گیا۔

شادی سے صرف 3 گھنٹے پہلے واش روم جانے والے نوجوان دولہا کے ساتھ ایسا خوفناک کام ہوگیا کہ دلہن کے سب ارمان مٹی میں مل گئے

اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق 71 سالہ المیدا ایرل اپنے بیٹے کے جنازے میں شرکت کے لئے آنے والے ایک 17 سالہ نوجوان پر فریفتہ ہوگئی اور تین ہفتے کے معاشقے کے بعد اس کے ساتھ شادی بھی رچالی۔ المیدا ایرل اپنے نوعمر شوہر گیری ہارڈوک کو بیاہ کر اپنے گھر لے آئی ہے، جہاں ان کے ساتھ المیدا کے دو پوتے بھی مقیم ہیں، جن میں سے ایک بڑھیا کے نوعمر شوہر سے تین سال بڑا ہے۔

المیدا ایرل نے بتایا کہ تین سال قبل ان کے شوہر کی وفات ہوئی تو وہ اکثر روتی رہتی تھیں۔ ان کا کہنا ہے کہ لوگ اکثر سمجھتے تھے کہ وہ دنیا سے رخصت ہوجانے والے اپنے خاوند کے غم میں مبتلا ہیں مگر ان کے دل میں تنہائی کا غم تھا اور وہ نئے شریک حیات کی تلاش میں تھیں۔ المیدا نے بتایا کہ جب انہوں نے اپنے بیٹے کے جنازے میں شریک نوجوان گیری کو پہلی بار دیکھا تو ان کے دل نے اسی لمحے پکارا ”یہی ہے وہ جس کی مجھے تلاش تھی۔“

وہ کہتی ہیں کہ اپنے بیٹے کی آخری رسومات کے دوران بھی وہ گیری کی آنکھوں میں آنکھیں ڈالے مسکراتی رہیں۔ انہوں نے اسے اپنی خوش قسمتی قرار دیا کہ گیری کے دل میں بھی ان کے لئے محبت کے جذبات پیدا ہوگئے اور مختصر رومانس کے بعد وہ ہمیشہ کے لئے ایک ہوگئے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -