قندیل بلوچ قتل کیس: مرکزی ملزم وسیم گرفتار کر لیا گیا، غیرت کے نام پر قتل کیا،کوئی شرمندگی نہیں: بھائی

قندیل بلوچ قتل کیس: مرکزی ملزم وسیم گرفتار کر لیا گیا، غیرت کے نام پر قتل ...
قندیل بلوچ قتل کیس: مرکزی ملزم وسیم گرفتار کر لیا گیا، غیرت کے نام پر قتل کیا،کوئی شرمندگی نہیں: بھائی

  

ملتان(مانیٹرنگ ڈیسک) ملتان پولیس نے ماڈل قندیل بلوچ کے قتل کے مرکزی ملزم اس کے بھائی وسیم کو گرفتار کر لیا ہے۔سی پی او ملتان اظہر اکرم کا کہنا ہے کہ ملزم کو جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے گرفتار کیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق انہوں نے رات گئے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ابھی تک یہی بات سامنے آئی ہے کہ وسیم نے غیرت کے نام پر اپنی بہن کو قتل کیا۔ملزم نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے۔ اس نے قتل اکیلے ہی کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ قتل کے بعد ملزم اپنے دو دوستوں کے ساتھ ڈی جی خان چلا گیا تھا لیکن ہماری ٹیموں نے مسلسل محنت کر کے اس کو گرفتار کر لیا۔اس کے دونوں دوستوں کو بھی تلاش کر رہے ہیں۔ اگر وہ ملوث ہوئے تو ان کو بھی گرفتار کیا جائے گا تاہم ملزم کا کہنا ہے کہ اس نے اکیلے ہی یہ قتل کیا ہے۔ابھی اس کی تفتیش ہونی ہے کہ اس نے دودھ میں کوئی نشہ ملایا کہ نہیں۔ انہوں نے کہا کہ قندیل کے والدین کو گرفتار نہیں کیا گیا وہ اپنے گھر میں ہیں۔ ابھی انہوں نے یہ فیصلہ نہیں کیا کہ اس کی تدفین کہاں کی جائے گی۔پریس کانفرنس میں ملزم کو بھی پیش کیا گیا۔ملزم وسیم کا اس موقع پر کہنا تھا کہ میں نے قندیل کی حالیہ ویڈیو دیکھ کر اس کو قتل کیا۔ پہلے جو ویڈیوز آئی تھیں وہ اتنی خراب نہیں تھیں اب جو ویڈیو اس نے بنائی وہ سب سے زیادہ خراب تھی جس پر میں نے اس کو قتل کیا۔ میں نے اس کا گلا گھونٹ دیا جس سے اس کی موت ہوئی۔ میں نے اس کو مارنے سے پہلے نشہ آور دودھ پلایا تھا۔ ملزم نے کہا کہ مجھے اس قتل پر کوئی شرمندگی نہیں۔ قندیل نے بلوچوں کا نام بدنام کیا جس پر میں طیش میں آگیا۔

مزید :

ملتان -اہم خبریں -