پولیس کے ہاتھو ں قتل ہونے والے لڑکے کی ماہ سیشن عدالت میں بے ہوش

پولیس کے ہاتھو ں قتل ہونے والے لڑکے کی ماہ سیشن عدالت میں بے ہوش

  

لاہور(نامہ نگار)نشترکالونی میں 2پولیس کانسٹیبلوں نے میرے بیٹے ارسلان کو فائرنگ کرقتل کیا،انصاف نہ ملنے پر مقتول کی ماں مینا بی بی سیشن عدالت میں بے ہوش ہوگئی،عدالت نے آئندہ سماعت پرنشترکالونی پولیس سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ ایڈیشنل سیشن جج مظہر سلیم رامے کی عدالت میں نشترکالونی میں پولیس کانسٹیبل عرفان اور ذیشان کے ہاتھوں قتل ہونے والے ارسلان بہادر کی والدہ مینا بی بی اپنے وکیل کی وساطت سے پیش ہوئی۔ عدالت میں پیشی کے موقع پر اپنے بچے کی تصویر چومتے ہوئے بے ہوش ہوگئی۔عدالت میں مینا بی بی نے بتایا کہ اس کے بیٹے کو پولیس کانسٹیبل عرفان نے بلاوجہ سرکاری رائفل سے فائرنگ کرکے قتل کیا۔ اس نے بتایا کہ گرفتارہونے کے باوجود پولیس اپنے پیٹی بھائی کے خلاف تفتیش نہیں کررہی۔

ہے تاہم عدالت سے ا ستدعا ہے کہ اس کے بیٹے کی تفتیش کسی سینئر پولیس آفیسر سے کرانے کا حکم دیا جائے۔ عدالت نے آئندہ پیشی پرتھانہ نشتر کالونی پولیس سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -