تحفظ پاکستان ایکٹ میں توسیع کی مخالفت کی جائیگی ، مولانا فضل الرحمن

تحفظ پاکستان ایکٹ میں توسیع کی مخالفت کی جائیگی ، مولانا فضل الرحمن

  

 اسلام آباد(این این آئی)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے چیف مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ ان کی جماعت تحفظ پاکستان ایکٹ 2014 یا پروٹیکشن آف پاکستان ایکٹ (پوپا) 2014 میں توسیع کی مخالفت کریگی۔ایک انٹرویو میں مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ تحفظ پاکستان ایکٹ جمہوری اقدار کے خلاف ہے اور حکومت کو ایسے کسی قانون کی توسیع نہیں دینی چاہیے۔انھوں نے زور دیا کہ مذکورہ قانون کے تحت مذہبی جماعتوں اور ان کے کارکنوں کا نشانہ بنا جارہا ہے۔جے یو آئی ف کے چیف نے کہا کہ تحفظ پاکستان ایکٹ ملک کی مذہبی جماعتوں ٗان کے کارکنوں اور مذہبی رہنما کو نشانہ بنانے کیلئے بنایا گیا ہے۔مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ اس سے قبل قائم کی جانے والی فوجی عدالتیں عوام کی توقعات پر پورا نہیں اتر سکیں۔انہوں نے کہاکہ عوام امید کر رہی تھی کہ فوجی عدالتیں ان کو انصاف مہیا کریگی تاہم بدقسمتی سے ایسا نہیں ہوا۔انھوں نے کہا کہ فوجی عدالتیں قائم کرنے سے یہ تاثر ملا ہے کہ پہلے سے قائم عدالتیں نظام اور جج کمزور تھے۔مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ ایک شخص 4 سال قبل لاپتہ ہوا تاہم فوجی عدالت نے اسے ایسے جرم میں پھانسی دی جو واقعہ صرف ایک سال قبل رونما ہوا تھا۔

مولانا فضل الرحمن

مزید :

راولپنڈی صفحہ اول -