معاشرے کی بہتری کیلئے مشترکہ جدوجہد کی ضرورت ہے ،یوسف مستی خان

معاشرے کی بہتری کیلئے مشترکہ جدوجہد کی ضرورت ہے ،یوسف مستی خان

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) عوامی ورکر پارٹی کے صدر یوسف مستی خان نے کہا ہے کہ معاشرے کی بہتری کیلئے سب کو مل جل کر کام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ایک اچھا معاشرہ تشکیل پاسکے۔ بعض ممالک نے اپنے ملک کو ویلفیئر اسٹیٹ کا درجہ دیا ہوا ہے تاکہ وہاں عوام انقلاب نہ لاسکیں۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے ممتاز سیاسی شخصیت ، مصنف عابد حسین منٹو کی کتاب ’’اپنی جنگ رہے گی‘‘ کی تقریب رونمائی کے موقع پر مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر عابد حسین منٹو کے علاوہ، اختر حسین ، جاوید قاضی، شفیع محمد ودیگر نے بھی خطاب کیا۔ یوسف مستی خان نے کہا کہ عابد حسین منٹو کی یہ کتاب انتہائی معلوماتی ہے اور 1986ء سے لے کر 1996ء تک کے حالات کا اس میں ذکر ہے۔ لیکن ضرورت اس بات کی ہے کہ عابد حسین منٹو اس میں تمام تفصیلات پھر بھی نہیں دے سکے، لہذا میں مشورہ دوں گا کہ وہ ایک اور کتاب لکھیں تاکہ عوام زیادہ سے زیادہ مستفید ہوسکیں۔ انہوں نے تقریب کے شرکاء سے اپیل کی کہ عوامی ورکر کی کراچی میں ہونے والی کانگریس میں زیادہ سے زیادہ شرکت کریں۔ کتاب کے مصنف عابد حسین منٹو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوامی ورکر پارٹی کا دیگر دو پارٹیوں سے اشتراک ایک مشکل مرحلہ تھا ، جو کہ میں چاہتا تھا کہ ہم دو چار مہینے بغیر اتحاد کے کام کریں تاکہ کسی بہتر نتائج حاصل کرسکیں، لیکن کچھ لوگوں نے جلدی کی جس کی وجہ سے یہ اتحاد فوری تشکیل دینا پڑا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری سوسائٹی جان بوجھ کر اس وقت ’’نا ن ایشوز‘‘ کو ایشوز بنارہی ہے جس سے اصل ایشوز سے ذہن ہٹایا جارہا ہے۔ بڑا ایشو یہ ہے کہ ہم بڑے ایشوز کو عوام کے سامنے لے کر جائیں کیونکہ عوام اس وقت دبے ہوئے ہیں۔ انہیں ہمت افزائی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اکتوبر کے بعد میں قانونی طور پر پارٹی کا لیڈر نہیں ہونگا،لہذا میں چاہتا ہوں کہ میری اس مدت کے دوران ہی بہت سے عوامی مسائل حل کرلیے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اس وقت مشکل مراحل سے گذر رہا ہے،ہمیں چاہیے کہ اس وقت خصوصی توجہ دیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی کمیونسٹ پارٹیاں ملک بنانے کے حق میں تھیں جبکہ مذہبی پارٹیاں مسلسل مخالفت کررہی تھیں۔ کمیونسٹ پارٹیوں کو مفت میں بدنام کیا گیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -