وزیر اعلیٰ خٹک نے ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کیلئے شہر میں زکوڑی اور حیات آباد میں ڈیٹور چوک پر فلائی اوور بنانے کا اعلان کردیا

وزیر اعلیٰ خٹک نے ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کیلئے شہر میں زکوڑی اور حیات ...
 وزیر اعلیٰ خٹک نے ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کیلئے شہر میں زکوڑی اور حیات آباد میں ڈیٹور چوک پر فلائی اوور بنانے کا اعلان کردیا

  

پشاور(این این آئی)وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے پشاور شہر اور حیات آباد میں گنجان ترین مقامات پر ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کیلئے پشاور شہر میں زکوڑی کے مقام پر جبکہ حیات آباد میں ڈیٹور چوک پر فلائی اوور بنانے کا اعلان کیا ہے۔ منصوبے پر تقریباً دو ارب روپے لاگت آئے گی ۔ انہوں نے رواں سال اگست میں منصوبے کا افتتاح ممکن بنانے کیلئے انتظامات کو حتمی شکل دینے کی ہدایت کی ہے۔ وہ وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں اعلیٰ سطح اجلاس کی صدارت کر رہے تھے سینئر صوبائی وزیر عنایت ﷲ خان، چیف سیکرٹری امجد علی خان، ایڈیشنل چیف سیکرٹری اعظم خان، سیکرٹری بلدیات ، پی ڈی اے، نیسپاک ، این ایل سی کے ڈائریکٹر جنرلز اور دیگر متعلقہ حکام اجلاس میں موجود تھے ۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ حکومت پشاور میں میٹرو سروس چلانے کی پہلے سے منصوبہ بندی کر چکی ہے لہٰذا مذکورہ بالا منصوبوں کو اس طریقے سے ڈیزائن کیا جائے کہ میٹرو سروس کے راستے میں رکاوٹ نہ ڈالیں ۔ انہوں نے اس فلائی اوور کیلئے اراضی کے حصول اور منصوبے کے متاثرین کو مناسب مراعات دینے کی ہدایت کی ۔انہوں نے اجلاس کے شرکاءکو شہر میں عوامی اہمیت کے حامل دوسرے منصوبے پلان کرنے کی بھی ہدایت کی ۔ انہوں نے کہاکہ ان تمام تر کوشش کا ہدف پشاور سٹی کو ماڈل سٹی بنانا ہے۔ وزیراعلیٰ نے اس موقع پر پشاور شہر سے تجاوزات کا مکمل خاتمہ کرنے اور اس سلسلے میں کوئی سمجھوتہ نہ کرنے کی ہدایت کی ۔انہوں نے باڑہ روڈ کی مرمت اور سٹیک ہولڈرز کے ساتھ مشاورت کے تحت اس کی توسیع کا پلان بنانے کا بھی حکم دیا۔ انہوں نے اس موقع پر علاقے کا سروے کرنے کی ضرورت پر زور دیا تاکہ عوام کے وسیع تر مفاد میں بہترین فیصلہ کیا جا سکے۔ پرویز خٹک نے دلہ زاک روڈ کا سروے کرکے اس کی خوبصورتی کیلئے پلان مرتب کرنے کی بھی ہدایت کی ۔ اسی طرح انہوں نے اسمبلی پل اور پشاور شہر کی خوبصورتی کیلئے اقدامات کرنے کا حکم دیا ۔ مزید برآں انہوں نے ورسک روڈ اور ناصر باغ پر کام کی رفتار تیز کرنے اور اسے ایکسپریس وے کی طرز پر ڈویلپ کرنے کی ہدایت کی ۔

مزید :

پشاور -