حق مہر پر  تنازع ‘ بارات دلہن کے بغیر واپس ‘ مہمان سے نکاح

حق مہر پر  تنازع ‘ بارات دلہن کے بغیر واپس ‘ مہمان سے نکاح
حق مہر پر  تنازع ‘ بارات دلہن کے بغیر واپس ‘ مہمان سے نکاح

  

سرگودھا (ویب ڈیسک) سرگودھا میں شادی کی تقریب میں نکاح کے وقت حق مہر کے لیے ایک لاکھ روپے کی رقم لکھوانے پر جھگڑا ہو گیا۔ چار گھنٹے تک بارات دلہن کے گھر کے باہر بیٹھی رہی مصالحت نہ ہونے پر دولہا کے بغیر بارات واپس لے گیا۔ دلہن کی شادی گھر آئے مہمان سے کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سرگودھا کے گنجان آباد علاقہ نیو محمد ی کالونی کے رہائشی نوجوان محمد نعمان کی شادی بلاک 35 میں طے پائی، نعمان باراتیوں کے ساتھ سج دھج کر دلہنیا لینے جب اپنے ہونے والے سسرالیوں کے گھر پہنچا تو نکاح کے دوران حق مہر کی رقم پر پھڈا پڑ گیا۔ نعمان کی ہونے والی دلہن نور کے رشتہ داروں کی خواہش تھی کہ نکاح نامے میں حق مہر کی رقم ایک لاکھ روپے تحریر کی جائے لیکن نعمان کے قریبی رشتہ داروں نے حق مہر ایک لاکھ روپے نکاح نامے میں تحریری کرنے سے انکار کر دیا جس پر نعمان اسی طرح سہرے سجائے دلہن کے بغیر بارات واپس لے کر گھر آگیا۔

ذرائع کے مطابق نور نامی دلہن کے اہلخانہ نے شادی میں آئے ایک مہمان نوجوان کے ساتھ نکاح کے بعد خاموشی کے ساتھ رخصتی کر دی جس نوجوان کے ساتھ اس کی شادی کی گئی اس نے ایک لاکھ روپے حق مہر تحریر کرنے کی حامی بھرلی جس پر دلہن کو اس کے ساتھ رخصت کر دیا گیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -