پاکستا ن بلوچ یونٹی کی کوئٹہ سے سبی تک پاکستان،خالصتان زندہ باد انڈیا مردہ باد ریلی

پاکستا ن بلوچ یونٹی کی کوئٹہ سے سبی تک پاکستان،خالصتان زندہ باد انڈیا مردہ ...

  

کوئٹہ (آئی این پی) پاکستان بلوچ یونٹی کے وائس چیئرمین میر خدا بخش مری کی قیادت میں میں کوئٹہ سے سبی تک سینکڑوں گاڑیوں پر(بقیہ نمبر56صفحہ12پر)

 مشتمل پاکستان زندہ باد، انڈیا مردہ باد، خالصتان زندہ باد ریلی نکالی گئی جس میں بڑ ی تعداد میں بلوچ رہنماں اور مختلف بلوچ قبائل کے ہزاروں افراد نے شرکت کی، اس باوقار ریلی میں سو سے زائد گاڑیاں شامل تھیں۔تفصیلات کے مطا بق منگل کے روز یہ ریلی کوئٹہ کے مختلف راستوں سے ہوتی ہوئی سبی کیلئے روانہ ہوئی تو راستہ میں بلوچ عوام نے اس ریلی کا والہانہ استقبال کرتے ہوئے پاکستان زندہ باد اور پاک فوج زندہ باد کے پرجوش نعرے لگائے،جب یہ ریلی سبی کی حدود میں داخل ہوئی تو وہاں پر بھی مقامی لوگوں کی بڑی تعداد نے زبردست استقبال کرتے ہوئے میر خدا بخش مری اور ان کے کاررواں پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کرتے ہوئے والہانہ انداز میں خیر مقدم کیا۔یہ عظیم الشان ریلی سبی شہرمیں چاکر روڈ سے ہوتی ہوئی جرگہ ہال پہنچی، جہاں پہلے سے موجود ہزاروں افرادنے پاکستان بلوچ یونٹی کے رہنماں کو خوش آمدید کہتے ہوئے پرجوش نعرہ بازی کی،ریلی کے اختتام پرپاکستان بلوچ یونٹی کے مرکزی چیئر مین ڈاکٹر جمعہ خان مری نے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وہ پاکستان بلوچ یونٹی کے وائس چیئرمین میر خدا بخش مری اور ان کی پوری ٹیم کے بے حد مشکور ہیں جنہوں نے ایک بار پھر بھارت کے پروپیگنڈے کو رد کرتے ہوئے خالصتان اور تحریک خالصتان کی بھرپور حمایت کاشاندار عملی مظاہرہ کیا ہے اور بلوچ اقوام کے احساسات و جذبات کی بھر پور ترجمانی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سکھ ہمارے بھائی ہیں ہم ان کیساتھ ہیں اور سکھوں کی آزادی کی جنگ میں بلوچ قوم ان کی بھرپور حمایت کریگی۔ پاکستان بلوچ یونٹی کے وائس چیئرمین میر خدا بخش مری نے اپنے خطاب میں مسنگ پرسنز کے ایشو کو اٹھاتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے ریاستی اداروں کیخلاف مکروہ پراپیگنڈہ کرنیوالے بھارت نواز بی ایل اے کے لیڈران براہمداغ بگٹی اور ہربیار مری معصوم بلوچ لوگوں کے سفاک قاتل ہیں،بھارت کے کٹھ پتلی براہمداغ اورحربیار مری کو بلوچ قوم کے اس سوال کا جواب دینا ہوگا کہ وہ اپنے ذاتی مفادات کی خاطر ابتک کتنے معصوم بلوچوں کو قتل کراچکے ہیں۔میر خدا بخش مری نے جذباتی انداز میں انڈیا سرکار کے پراپیگنڈہ کا منہ توڑ جواب دیتے ہوئے کہا کہ جب جب مودی نے بلوچستان کی علیحدگی کی بات کی تو صرف چند مٹھی بھر ضمیر فروش ہی بکے اوربلوچ قوم کے غداروں نے اپنے ذاتی مفادات کی خاطر انڈیا کی ہاں میں ہاں ملاتے ہوئے پاکستان کی ریاست اور پاکستان کی محافظ افواج کیخلاف جھوٹا پراپیگنڈہ کرتے ہوئے جذباتی نوجوان بلوچوں کو گمراہ کرنیکی سازش کی جوکہ بری طرح فلاپ اور ناکام ہوچکی ہے اور بلوچ قوم جان چکی ہے کہ براہمداغ بگٹی اور حربیار مری وغیرہ بھارت کے کٹھ پتلی ہیں جوبیرون ممالک اپنی عیاشیوں کیلئے بھارت سرکار سے پیسہ لیکر بھارت ہی کی زبان بولتے ہیں۔اس لیے پوری بلوچ قوم نے انڈیا اور ان کے حواریوں کے نظریئے کو پوری طرح مسترد کر دیا ہے۔خالصتان موومنٹ ٹوینٹی ٹوینٹی کے سربراہ سردار پرمجیت سنگھ پما نے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے پوری بلوچ قوم کا اور خصوصا میر خدا بخش مری اور ان کی ٹیم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے بلوچ بھائیوں کی اس کاوش کو سراہتے ہیں جو کہ اپنی ریلی اور جلسے کے ذریعے خالصتان تحریک کی حمایت کا عملی مظاہرہ کرکے عالمی میڈیا پربھی ہماری پذیرائی اورکھلی حمایت کررہے ہیں۔ ڈاکٹر پرمجیت سنگھ پمانے کہا کہ انڈیا نے چند ضمیر فروش غلاموں کو خرید کر پوری بلوچ قوم کو بد نام کیا اور آج مجھے اس بات کی خوشی ہے کہ بلوچ قوم نے ایک بار پھر ثابت کردیا کہ وہ ہندوستان کیساتھ نہیں بلکہ ہندوستان کیخلاف اور تحریک خالصتان کیساتھ کھڑے ہیں اور بھارت کے کٹھ پتلی ضمیر فروش بلوچ رہنماں کے ایجنڈے کو بھی اعلانیہ طور پر مسترد کررہے ہیں۔

 زندہ باد ریلی 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -