سیمی فائنل میں شکست، بھارتی ٹیم، مینجمنٹ میں تبدیلیوں کا فیصلہ

سیمی فائنل میں شکست، بھارتی ٹیم، مینجمنٹ میں تبدیلیوں کا فیصلہ

  

ممبئی (آئی این پی)بھارتی کرکٹ بورڈ نے کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کے سیمی فائنل میں بھارتی ٹیم کی شکست کے بعد ٹیم مینجمنٹ میں تبدیلیوں کا فیصلہ کر لیا۔بھارتی کرکٹ بورڈ نے روی شاستری سمیت تمام سپورٹ اسٹاف سے معاہدے ختم کر دیئے، جبکہ نئے ٹیم سپورٹ اسٹاف کے لیے درخواستیں طلب کر لیں۔بھارتی کرکٹ بورڈ نے ہیڈ کوچ، بیٹنگ کوچ، بولنگ کوچ، فیلڈنگ کوچ، اسٹرینتھ اینڈ کنڈیشننگ کوچ، انتظامی منیجر اور فزیو تھراپسٹ کے لیے درخواستیں طلب کر لیں۔موجودہ کوچنگ اسٹاف ریکروٹمنٹ پراسیس میں براہِ راست شامل ہو گا۔واضح رہے کہ بھارتی کرکٹ ٹیم کو ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ کے ہاتھوں شکست ہوئی تھی۔دریں اثناؤرلڈ کپ 2019کے سیمی فائنل میں شکست کے بعد قوی امکان ہے کہ انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کو کپتانی سے ہٹادیا جائے گا اور ان کی جگہ ان کے حریف روہت شرما کو کپتان بنادیا جائے گا۔بھارتی میڈیا کے مطابق ورلڈ کپ کے فائنل فور مرحلے میں شکست کے بعد بی سی سی آئی نے کپتان کی تبدیلی پر غور شروع کردیا ہے۔ انڈین ٹیم کے وطن پہنچتے ہی کپتان اور کوچ کو بورڈ کے سخت سوالات کا سامنا کرنا پڑے گا۔بھارتی کرکٹ بورڈ کے ایک اعلی افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ اگلے ورلڈ کپ کیلئے حکمت عملی بنانے کا یہ صحیح وقت ہے اور یہی وہ وقت ہے کہ ٹیم کی باگ ڈور اوپننگ بلے باز روہت شرما کے ہاتھوں میں دے دی جائے کیونکہ وہ بہترین متبادل ہیں۔ بی سی سی آئی کی جانب سے ویرات کوہلی سے ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی کی کپتانی لے کر اسے روہت شرما کے حوالے کیے جانے کا امکان ہے جبکہ ٹیسٹ ٹیم کی قیادت بدستور کوہلی کے پاس ہی رہے گی۔افسر نے کہا کہ سب سے بڑا مسئلہ ان افواہوں کا جائزہ لینا ہے جن میں یہ دعوی کیا گیا ہے کہ ویرات کوہلی اور روہت شرما کے درمیان ورلڈ کپ میں دوریاں پیدا ہوگئی تھیں۔ بورڈ کی انتظامی کمیٹی کی موجودگی میں کوچ روی شاستری، چیف سلیکٹر ایم ایس کے پرساد اور کپتان کوہلی سے ان معاملات پر بھی بات کی جائے گی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -