قانون کی رٹ کو مستحکم بنانا اولین ترجیح ہے ،ڈی پی او ہنگو

قانون کی رٹ کو مستحکم بنانا اولین ترجیح ہے ،ڈی پی او ہنگو

  

ہنگو(بیورورپورٹ ) پولیس فورس پیشہ ورانہ زمہ داریوں کوہرحال میں پوراکرے،اشتہاریوں کی گرفتاری،ناجائزاسلحہ پکھڑنااورقانونی رٹ کومستحکم بنانااولین ترجیح ہونی چاہئیے.ہوائی فائرنگ کسی صورت برداشت نہیں کرسکتے.قبائلی اضلاع میں انتخابات کے تناظرمیں اسلحہ لیکرچلنے والوں اورشرپہلانے والوں کے خلاف بلاخوف وخطرکاروائی کریں،عوام دوست پولیس کے تصورکی تعبیرنظرانی چاہئیے.* ان خیالات کااظہارڈسٹرکٹ پولیس افیسرہنگواحسان اللہ خان نے اپنے آفس میں پولیس افسران کے غیرمعمولی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا.اجلاس میں ایس پی انوسٹی گیشن زین خان جدون،ڈی ایس پی ہیڈکواٹراسدزبیر،ڈی ایس پی سٹی سرکل امجدخان،ڈی ایس پی ٹل شوکت علی شاہ،تمام تھانوں کے ایس ایچ اوز،تفتیشی افسران،پال آفس کے انچارج اوردیگرمتعلقہ پولیس سٹاف نے شرکت کی.اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی پولیس سربراہ ہنگواحسان اللہ خان نے کہا کہ ڈی آئی جی کوہاٹ ریجن طیب حفیظ چیمہ کی ہدایات کے مطابق پولیس کوعصرحاضرکے تقاضوں کومدنظررکھتے ہوئے جرائم کی روک تھام اورپائیدارامن کیلئے فرائض اداکرناہونگے،انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع میں انتخابات کے تناظرمیں غیرقانونی اسلحہ لیکرچلنے والوں اشتہاریوں،عادی جرائم پیشہ افراد،قانون شکنی کرنے والوں،لاوڈسپیکرکے بے جااستعمال،ہوائی فائرنگ کرنے والوں کے خلاف اورمعاشرے میں نفرت،انتشار پھلانے والوں کے خلاف ہرمصلحت سے ازادہوکرقانون کوحرکت میں لانا آپ سب کی ذمہ داری ہے.ڈی پی اواحسان اللہ خان نے پولیس افسران پرزوردیا کہ تفتیشی عمل کوبھتربنایاجائے،تھانوں اورپال آفس میں شہریوں کی شکایات کا مناسب اندازمیں ازالہ ہوناچاہیئے اورعوام کے جان ومال اورابروکے تحفظ کافریضہ اداہوناچاہئیے،انہوں نے واضح کیاکہ پولیس عوام کی محافظ ہے اوراس کی کارکردگی کی بنیادپرمعاشرے میں امن قائم ہوناہے.انہوں نے پولیس افسران کوباورکرایاکہ پولیس فورس کی مشکلات اورمسائل کاادراک ہے جنہیں ہرصورت دورکیاجائے گا.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -