محکمہ صحت کو یوایس ایڈ کے تعاون سے جدید سہولتوں کی فراہمی

محکمہ صحت کو یوایس ایڈ کے تعاون سے جدید سہولتوں کی فراہمی

  

پشاور(سٹاف رپورٹر) محکمہ صحت خیبر پختونخواہ اور (JSI) جان سنو انکارپوریشن امریکا کے درمیان خیبر پختونخواہ کی عوام کو اعلٰی صحت کی سہولیات مہیا کرنے کے حوالے سے یو ایس ایڈ کے تعاون سے کئی منصوبوں پر باہمی رضا مندی ہوئی۔ اجلاس میں محکمہ صحت خیبر پختونخوا کی جانب سے بیشتر اعلیٰ افسران نے شرکت کی جن میں سیکرٹری ہیلتھ ڈاکٹر فاروق جمیل، ڈی جی ہیلتھ ڈاکٹر ارشد ، ایڈیشنل ڈی جی طاہر خلجی، چیف ایچ ایس آر یو ڈاکٹر شاہد یونس، ڈاکٹر جواد آصف ایڈوائزر ٹو منسٹر کے علاوہ جی ایس آئی کی کنٹری ہیڈ ڈاکٹر نبیلہ علی اور جے ایس آئی کے دیگر اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔ منصوبے کے تحت جی ایس آئی آزمائشی بنیادوں پر یو ایس ایڈ کی معاونت سے پہلے مرحلے میں محکمہ صحت خیبر پختونخواہ کے چار اضلاغ لکی مروت ،سوات، مومند اور چارسدہ میں صحت کی سہولیات میں بہتری لانے کے لئے محکمہ صحت کو مختلف شعبوں میں معاونت فراہم کرے گا جن میں ماں اور بچے کی بہتر صحت اور نشونما کے لیے بیشتر ترقیاتی کام رکھے گئے ہیں جن میں نومولود بچوں کی اعلٰی نشونما کے لیا جدید بنیادوں پر محیط نوزائیدہ بچے کی دیکھ بھال کے یونٹس جیسے پروجیکٹس شامل ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ جے ایس آئی محکمہ صحت خیبر پختونخوا کے 150 ملازمین جن میں نرسز اور ٹیکنیکل اسٹاف شامل ہیں ان کی آغا خان ہسپتال، الشفا اور پمز سے جدید بنیادوں پر اعلی تربیت کے لیے مختلف وظیفے جاری کرے گا۔ منصوبے کے تحت جی ایس آئی مختص کیے گئے چار اضلاع کو ڈاکٹرز اور عملے کے ساتھ موبائل ہیلتھ یونٹس کو بہتر طریقہ سے چلانے کے لیے معاونت بھی فراہم کرے گی جن سے دور دراز علاقوں میں صحت کی بہترین سہولیات مہیا کرنے میں آسانی میسر آئے گی اور اضلاع کے مختلف ہسپتالوں حادثات اور ایمرجنسی کے شعبے میں جدید بنیادوں کے تحت بہتری لائی جائے گی اور ہر ضلع کو جدید سہولیات سے آراستہ تین تین ایمبولینس بھی مہیا کی جائیں گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -