مشینری اور پلانٹ کی در آمد پر سیلز ٹیکس ختم کیا جائے: وفاقی چیمبر 

   مشینری اور پلانٹ کی در آمد پر سیلز ٹیکس ختم کیا جائے: وفاقی چیمبر 

  

کراچی(این این آئی) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامر س اینڈ انڈسٹر ی کے صدر انجینئر داروخان اچکزئی نے چیئرمین FBRشبر زیدی کو زور دیتے ہو ئے کہاکہ فنانس ایکٹ 2019 سیلز ٹیکس ایکٹ 1990 کے سیکشن 7A (2)  کے تحت پلا نٹ اور مشینر ی پر 3فیصد Value Added  سیلزٹیکس لگا یا گیا تھا جسے ختم کیا جا ئے یایکم جولا ئی 2019 سے لا گو کیا جا ئے۔ کیو نکہ اس سے حکومت کو سر ما یہ کاری بڑ ھانے، پیداوار میں مزید اضا فہ کرنے، بر آمدات کو بڑھانے میں مدد ملے گی ور اس کے ساتھ ساتھ رو زگار کے نئے مواقع بھی پیدا ہو ں گے۔ ایف پی سی سی آئی کے صدر انجینئر دارو خان اچکزئی کہاکہ اس ٹیکس کے بارے میں جب چیئرمین FBR کو بتا یا گیا تھا تو وہ اس بات پر متفق تھے کہ اسے ختم کیا جا ئے گا اس پہلے سابق اسٹیٹ منسٹر ریو نیو حماد اظہر نے حالات کی نزاکت کو سمجھتے ہو ئے اس بات کی یقین دہا نی کرائی کہ یہ ٹیکس غلطی سے فنانس ایکٹ 2019 میں شامل کیا گیا اور اسے ختم کر نے کا یقین دلا یا تھا۔ ایف پی سی سی آئی کے صدر انجینئر داروخان اچکزئی نے کہا کہ اس anomaly کو ابھی تک ختم نہیں کیا گیا اور صنعتکار وں میں مشینر ی کی درآمدات سے متعلق بے یقینی اور بے چینی پا ئی جا تی ہے اور یہ ٹیکس ابھی تک فنانس ایکٹ میں مو جود ہے جس سے تاجر برا دری الجھن کا شکا ر ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ پلانٹ مشینری کی در آمدات بغیر سیلز ٹیکس کے ایک مسئلہ بنی ہو ئی ہے۔  

مزید :

کامرس -