چارسدہ، پیدائشی سرجڑے جڑواں بہنوں کا لندن میں کامیاب آپریشن، نئی زندگی مل گئی

چارسدہ، پیدائشی سرجڑے جڑواں بہنوں کا لندن میں کامیاب آپریشن، نئی زندگی مل ...

  

چارسدہ (بیو رو رپورٹ) چارسدہ سے تعلق رکھنے والی دو پیدائشی سر جڑے جڑواں بہنوں صفا اور مروا کو خالق کائنات نے نئی زندگی دے دی۔دونوں سرجڑے بہنوں کے سر لندن کے ہسپتال میں 50گھنٹے کے طویل اپریشن کے بعد ایک دوسرے سے علیحدہ کر دئیے گئے۔ تفصیلات کے مطابق چارسدہ کے مضافاتی علاقے ڈھیری زردار سے تعلق رکھنے والی صفا اور مر و ا جو پیدائشی طور پر سرجڑے تھے اور ان کی پیدائش سے ڈیڑھ ماہ قبل ان کے والد دنیا سے رحلت کر گئے تھے۔اس حوالے سے ملکی اور غیر ملکی میڈیاپر رپورٹس چلنے کے بعد بر طانیہ کے ایک فلاحی تنظیم میڈ لینڈ آرگنائزیشن نے دونوں سر جڑے بچیوں کے اپریشن کے اخراجات کی خامی بھر لی اور گریٹ آرمنڈ سٹریٹ چلڈرن ہسپتال لندن میں سر جڑے بچیوں کے اپریشن کیلئے تقریبا 18کروڑ روپے جمع کر دئیے۔ہسپتال کے ماہر ڈاکٹروں کی ٹیم نے سرجڑے بہنوں کا سارا میڈیکل ریکارڈ طلب کرکے مشاورت کی جس کے بعد گزشتہ سال دونوں بچیوں کو چارسدہ سے اسلام آباد اور بعد ازاں لندن منتقل کیا گیا۔ سرجڑے بہنوں کے اپریشن میں سابق وزیر اعلی پرو یز خٹک نے بھی بھر پور کر دار ادا کیا تھا اور بچیوں کے گھر آکر ان سے ملاقات بھی کی تھی۔ لندن پہنچنے کے بعد پرو فیسر ڈاکٹر ڈوناوے اور سرجن ڈاکٹر اویس جیلانی کی نگرانی میں 20رکنی میڈیکل ٹیم نے سرجڑے بہنوں صفا اور مر وا کا 50گھنٹے طویل اپریشن کیا۔50گھنٹے طویل اپریشن سے پہلے دونوں بچیوں کے متعدد چھوٹے چھوٹے اپریشن بھی کئے گئے۔ ابتدائی مرحلے میں میڈیکل ٹیم نے بچیوں کے دماغ کے سل علیحدہ علیحدہ کئے اور دماغ کی حالی جگہ پلاسٹک ٹرانسپلانٹ کرکے بچیوں کے سر پر جسم کا دوسرا چمڑا لگایا گیا۔سرجڑے بہنوں کو ایک دوسرے سے علیحدہ کرنے اور بحالی میں 11مہینے لگ گئے۔11ماہ بعد گزشتہ روز صفا اور مروہ کے لیے ہسپتال سے ڈسچارج کیا گیا مگر وہ بد ستور چھ ماہ تک لندن میں مقیم رہیں نگے اورباقاعدگی سے ڈاکٹروں کی نگرانی میں فزیو تھراپی اور میڈیسن استعمال کرینگے۔

مزید :

صفحہ اول -