جج ارشدملک کی مبینہ ویڈیوسکینڈل کامرکزی ملزم میاں طارق محمود گرفتار

جج ارشدملک کی مبینہ ویڈیوسکینڈل کامرکزی ملزم میاں طارق محمود گرفتار
جج ارشدملک کی مبینہ ویڈیوسکینڈل کامرکزی ملزم میاں طارق محمود گرفتار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو سکینڈل کے مرکزی ملزم میاں طارق محمود کو گرفتار کرلیاگیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جج احتساب عدالت ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو سکینڈل کے مرکزی ملزم میاں طارق محمود کو گرفتار کرلیاگیا،ملزم کواسلام آباد کے سیکٹرایف سیون سے گرفتارکیا گیا،میاں طارق کوایف آئی اے سائبرکرائم ونگ نے گرفتارکیا ،ملزم میاں طارق محمود کا تعلق ملتان سے ہے، ایف آئی اے کا کہا ہے کہ میاں طارق دبئی فرار ہونے کی کوشش کررہاتھا،ایف آئی اے نے ملزم طارق محمود کوعدالت پیش کردیاگیا ،ملزم کوجوڈیشل مجسٹریٹ شائستہ کنڈی کی عدالت میں پیش کیاگیا،ایف آئی اے کاکہنا ہے کہ ملزم احتساب عدالت کے جج کی وڈیوسکینڈل میں ملوث ہے، ملزم کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے،تفتیش کرنی ہے،جج نے ملزم سے استفسار کیا کہ آپ کچھ کہنا چاہیں گے، ملزم طارق محمود نے کہا کہ گرفتار کرکے مجھ پر تشدد کیا گیا،تشدد کی وجہ سے میری ہڈیاں ٹوٹ چکی ہیں،عدالت نے ملزم میاں طارق کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈ منظورکرلیااورتفتیشی افسرکو ملزم کو 19 جولائی کو میڈیکل رپورٹ کیساتھ پیش کرنے کی ہدایت کردی،ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ میاں طارق کے گھرسے برآمدویڈیو کا فرانزک کرالیاگیا۔واضح رہے کہ جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو سکینڈل میں 3 مرکزی کردار تھے جن میں ناصر بٹ،ناصر مجیداور میاں طارق محمود شامل تھے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -