پاکستان قونصلیٹ دبئی کی طرف سے دبئی کے ایک ہوٹل میں ”مینگو فیسٹیول “کا اہتمام

پاکستان قونصلیٹ دبئی کی طرف سے دبئی کے ایک ہوٹل میں ”مینگو فیسٹیول “کا ...
پاکستان قونصلیٹ دبئی کی طرف سے دبئی کے ایک ہوٹل میں ”مینگو فیسٹیول “کا اہتمام

  

دبئی (طاہر منیر طاہر) پاکستان قونصلیٹ دبئی کی طرف سے دبئی کے ایک ہوٹل میں ”مینگو فیسٹیول “کا اہتمام کیا گیا جس میں پاکستانیوں کے علاوہ دیگر اقوام عالم کے لوگوں نے شرکت کی اور پاکستانی آموں کے ذائقو ں سے لطف اندوز ہوئے۔ اس موقع پر پاکستانی آموں کی 20 سے زائد اقسام رکھی گئی تھیں جن میں سندھڑی، انوررٹول، چونسہ اور لنگڑا آم خاص طور پر قابلِ ذکر ہیں۔ دبئی میں منعقدہ پاکستانی آم میلہ میں ہزارو ں لوگو ں نے شرکت کی اور پاکستانی آموں میں اپنی دلچسپی دکھائی ذائقہ دار آم کھائے اور پاکستانی آموں کی تعریف کی۔ اس موقع پر پاکستانی قونصلیٹ سے کونسل جنرل احمد امجدعلی اور دیگر سٹاف ڈاکٹر ناصر خان، احمد شامی، فیاض احمد راجہ، خرم شہزاد، عاشق حسین اور سید حضور عباس شامل تھے جبکہ پاکستان بزنس کونسل دبئی کے صدر اقبال دار، کامران احمد ریاض، شبیرمرچنٹ، راجہ محمد شرواز اور پاکستانی کمیونٹی کے لوگ موجود تھے۔ فیسٹیول میں موجود لوگوں نے پاکستانی آموں کے بارے میں اظہارے خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی آم ذائقہ اور معیار کے اعتبار سے دنیا بھر میں مشہور ہیں پاکستانی آموں کی خوشبودور دور سے کھینچ کر لے آتی ہے۔ آم پھلوں کا بادشاہ ہے بلکہ کے دنیا کے بہترین، خوشبودار اور ذائقہ دار آم صرف پاکستان کے ہیں اور پاکستان کی پہچان ہیں نہ صرف پاکستانی بلکہ دیگر اقوام عالم کے لوگ خصوصاً مقامی عرب حضرات پاکستانی آم شوق سے کھاتے ہیں اور ہر سال آموں کے سیزن کا انتظار کرتے ہیں۔ دنیا بھر میں بہترین ورائٹی کے آم صرف پاکستان میں ہی دستیاب ہیں۔ یہی بلکہ ہر سال آموں کی ایکسپورٹ ایک منافع بخش کاروبار بن گئی قیمتی زررِمبادلہ کے حصول کے لیئے پاکستانی آموں کی مزید ایکسپورٹ اور کوالٹی پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

مزید :

عرب دنیا -