کلبھوشن یادیو بھارتی جاسوس ہے یا معصوم شہری؟ عالمی عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ سنادیا

کلبھوشن یادیو بھارتی جاسوس ہے یا معصوم شہری؟ عالمی عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ ...
کلبھوشن یادیو بھارتی جاسوس ہے یا معصوم شہری؟ عالمی عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ سنادیا

  

دی ہیگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) عالمی عدالت انصاف نے قرار دیا ہے کہ کلبھوشن یادیو بھارتی جاسوس ہے جسے بھارت کے حوالے نہیں کیا جائے گا۔

عالمی عدالت انصاف کے 15 رکنی بینچ کے سربراہ عبدالقوی احمد یوسف نے کلبھوشن یادیو کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے کلبھوشن یادیو کو بھارتی جاسوس قرار دیا ہے۔ عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ بھارت کلبھوشن یادیو کے 2 پاسپورٹس کی صفائی پیش کرنے میں ناکام رہی ہے۔ بھارت نے پاکستان کے بار بار کے مطالبے کے باوجود کلبھوشن یادیو کا اصلی پاسپورٹ فراہم نہیں کیا۔

عالمی عدالت نے قرار دیا کہ کلبھوشن یادیو نے مبارک حسین پٹیل کے نام پر 17 بار بھارت کے باہر کا سفر کیا۔ کلبھوشن یادیو پاکستان میں ہی رہے گا اور اس کے کیس پر نظر ثانی کی جائے گی۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں قرار دیا کہ ویانا کنونشن کسی جاسوس تک قونصلر رسائی کے حق پر قدغن نہیں لگاتا۔ عالمی عدالت کی جانب سے اپنے فیصلے میں جاسوس کو ویانا کنونشن کی روشنی میں قونصلر رسائی دینے سے ثابت ہوتا ہے کہ کلبھوشن یادیو ایک دہشتگرد ہے جو پاکستان میں دہشتگردی میں ملوث رہا ہے۔

مزید :

قومی -بین الاقوامی -