جج ارشد ملک کی ویڈیو ن لیگ کو کب فروخت ہوئی، کس کس نے بلیک میل کیا؟ تمام تفصیلات سامنے آنے کے بعد مقدمہ درج کرلیا گیا

جج ارشد ملک کی ویڈیو ن لیگ کو کب فروخت ہوئی، کس کس نے بلیک میل کیا؟ تمام ...
جج ارشد ملک کی ویڈیو ن لیگ کو کب فروخت ہوئی، کس کس نے بلیک میل کیا؟ تمام تفصیلات سامنے آنے کے بعد مقدمہ درج کرلیا گیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) ویڈیو کے ذریعے بلیک میل کرنے کے معاملے پر جج ارشد ملک کی درخواست پر ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ نے مقدمہ درج کرلیا۔

ایف آئی اے کو جج ارشد ملک کی جانب سے شکایت موصول ہوگئی ہے۔ وزارت قانون کے توسط سے ایف آئی اے کو 15 جولائی کو خط لکھا گیا اور ویڈیو بنانے پر مقدمے کے اندراج کی درخواست کی گئی۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ ویڈیو بلیک میل کرنے کیلئے بنائی گئی،ویڈیو بنانے کا مقصد ذاتی اور اداروں کا تشخص مجروح کرنا تھا۔

جج ارشد ملک نے درخواست میں کہا ہے کہ وہ سنہ 2000 سے 2003تک بطورایڈیشنل اینڈسیشن جج ملتان تعینات تھے، اور اس دوران میاں طارق نے ان کی ویڈیوبنائی اور اس ویڈیو کے ذریعے انہیں بلیک میل کرنے کی کوشش کی۔

جج ارشد ملک نے بتایا کہ میاں طارق نے چند ماہ پہلے ویڈیو (ن) لیگ کے رکن میاں رضا کو فروخت کی جس کے بعد انہیں ناصر جنجوعہ، ناصر بٹ، خرم یوسف، مہر غلام جیلانی نے بلیک میل کیا۔انہوں نے بتایا کہ انہیں بلیک میل کرکے نواز شریف کے کیسز میں تعاون کرنے کا کہا گیا۔جج ارشد ملک کی درخواست پر ایف آئی اے سائبر کرائم نے مقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -