دینی مدارس ختم کرنیوالے اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہوں گے، محمد قاسم

  دینی مدارس ختم کرنیوالے اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہوں گے، محمد قاسم

  

شیر گڑھ (نمائندہ پاکستان ) جمعیت علماء اسلام کے ضلعی امیر اور دارالعلوم شیر گڑھ کے مہتمم مولانا محمد قاسم نے کہاہے کہ دینی مدراس کو ختم کرنے والے کسی بھی صورت اپنے مذموم عزائم میں کامیاب نہیں ہونگے۔ امریکہ اور اسکے حواری دینی مدارس سے خوفزدہ ہیں اور ہر روز اسکے خلاف سازشیں کر رہے ہیں لیکن عوام کے تعاون سے اسے ہر صورت میں ناکام بنائیں گے۔وہ دار العلوم شیر گڑھ کے 71واں سالانہ دستار بندی اور ختم بخاری شریف کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔تقریب سے حافظ محمد سعید،مولانا محمد طیب،مولانا قیصر الدین اور مولانا سلیم شاہ نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پر فارغ التحصیل ہونے والے چھ سو سے زائد علماء کرام کی دستاربندی بھی کی گئی۔مولانا محمد قاسم نے فارغ ہونے والے علماء کرام کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ دینی اسلام کی سربلندی کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہ کریں۔ملک میں قادیانی لابی اس وقت سر گرم عمل ہے لیکن انکے مذموم عزائم کو خاک میں ملا نا ہو گا۔انہوں نے کہاکہ عوام قادیانی مصنوعات کا بائیکاٹ کریں اور حکومت بھی کلیدی عہدوں سے قادیانیوں کو ہٹائیں۔اس سلسلے میں جمعیت علماء اسلام بہت جلد ایک تحریک کا آغاز بھی کرئے گی۔انہوں نے کہاکہ ملک میں اسلام کی روشنی پھیلانے اور معاشرے میں بھائی چارے اور امن و محبت کو بڑھانے کے لئے دینی مدارس بر سر پیکار ہے۔عالمی اسٹیبلشمنٹ دینی مدارس سے خوف زدہ ہے اور اسی وجہ سے پیٹھ کے پیچھے سے مختلف قسم کے وار کررہا ہے لیکن انہیں یہ بات یاد رکھنی چاہیئے کہ دینی مدارس کو ختم کرنے والے خود صفحہ ہستی سے مٹ گئے۔مدارس اسلام کے مضبوط قلعے ہیں اور حکومت کے مالی تعاون کے بغیر ہر سال ساڑھے چار لاکھ سے زائد علماء فارغ ہو کر دین اسلام کی روشنی پھیلا رہے ہیں۔دار العلوم شیر گڑھ میں دستار بندی کے موقع پر عوام کی بڑی تعداد میں شرکت نے یہ ثابت کر دیا کہ اکوڑہ خٹک کے مدرسے کے بعد شیر گڑھ دار العلوم ایک بہت بڑا درسگار بن گیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -