زمینوں پر قبضے کیخلاف رہائشیوں کا پریس کلب کے باہر احتجاج

زمینوں پر قبضے کیخلاف رہائشیوں کا پریس کلب کے باہر احتجاج

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)دیہہ منگھوپیر،دیہہ بندمرادخان،دیہہ جام چاکرو اور دیگردیہہ واقع ضلع غربی اور ضلع ملیر کراچی کے رہائشی و موروثی مالکان نے اپنی زمینوں پر قبضے کیخلاف کراچی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ لینڈ مافیا، لوکل پولیس کی سرپرستی میں ہماری زمینوں پر قبضہ کررہے ہیں۔ ہماری موروثی زمینوں پر مختلف ہاوسنگ سوسائٹیوں جنکو SBCA پہلے ہی جعلی قرار دے چکی ہے ان پر تعمیرات کا سلسلہ جاری ہے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہم موروثی مالکان سے ہماری ہی زمینوں پر سے قبضے چھڑوانے کیلئے بھاری رقوم و رشوت طلب کی جا رہی ہے۔ ہم ڈپٹی کمشنر ضلع غربی اور ضلع ملیر، ایس۔ایس۔پی ضلع غربی اور ضلع ملیر اور تمام دیگر حکام کو کئی بار درخواست کر چکے ہیں مگر ہماری کوئی سنوائی نہیں ہو رہی ہے۔ ہماری وزیر اعلی سندھ، گورنر سندھ، چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ اور آئی جی سندھ سے اپیل ہے کہ فوری طور پر ہماری زمینوں پر سے قبضے ختم کروائے جائیں۔ اورجاری غیر قانونی تعمیرات کو فوری بند کروایا جائے۔بصورت ہمارے قانونی ا ور جائز مطالبات 7یوم میں پورے نہ کئے گئے ہم ڈپٹی کمشنر ضلع غربی اور ضلع ملیر کے دفاتر، گورنر ہاوس، چیف منسٹر ہاوس پر دھرنے دیں گے -

مزید :

صفحہ آخر -