حفاظتی اقدامات کے تحت قربانی کیلئے ضابطہ کار جاری

حفاظتی اقدامات کے تحت قربانی کیلئے ضابطہ کار جاری

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)محکمہ داخلہ سندھ نے مویشی منڈیوں اور حفاظتی اقدامات کے تحت قربانی کے لئے ضابطہ کار جاری کردیئے ہیں۔محکمہ داخلہ سندھ کی طرف سے جاری کردہ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ حفاظتی تدابیر کے تحت عید الا ضحی کی نماز کی ادائیگی کی اجازت ہوگی جبکہ قربانی کے جانوروں کی منڈیاں آبادی سے دور کھلے میدانوں میں لگائی جائیں، منڈیوں کی باقاعدہ چار دیواری ہو جبکہ منڈیوں میں مستقل جراثیم کش ادویات اسپرے کیے جائیں۔علاوہ ازیں نوٹیفیکیشن میں قربانی سے متعلق کہا گیا ہے کہ حتی الامکان اجتماعی قربانی کو ترجیح دی جائے تاکہ گلی کوچوں میں آلائشیں کم سے کم ہوں، مقامی حکومتیں قربانی کی آلائشوں کو فوری اٹھا کر ٹھکانے لگانے کا اہتمام کریں، قربانی کی کھالیں خریدنے والوں کو پابند کیا جائے کہ وہ جلد از جلد کھالیں اٹھا کر اپنے محفوظ مقامات تک پہنچائیں اور ٹریٹ کریں، قربانی کی جگہ کو جراثیم کش دوا سے دھویا جائے اور صفائی اسپر ے کا مکمل اہتمام کیا جائے۔بزرگ اور بچوں پر مویشی منڈی آنے پر پابندی ہوگئی اور صرف مقررہ مقامات جن کا تعین ضلعی انتظامیہ کرے گی ان مقامات پر مویشی منڈی کی اجازت ہوگی اور صرف وہیں خریدو فروخت ہو سکتی ہے۔گلی محلوں اور شہر میں کسی بڑی مویشی منڈی لگانا خلاف قانون ہوگا جس پر کارروائی ہوگی.جانوروں کی خریداری کے لیے لوگ احتیاطی تدابیر اختیار کریں اور شہری ٹولیوں کی صورت جانوروں کی خریداری کے لیے نہ ائیں اسی طرح 55 سال سے زائد اور 15 سال سے کم عمر بچو ں کے منڈی آنے پر پابندی ہوگی جبکہ منڈیوں میں خریدار کے لیے ماسک کا استعمال لازمی ہوگاکورونا وائرس کی روک تھام کے پیش نظر ضلعی انتظامیہ مویشی منڈیوں میں ایس او پیز پر عملدرآمد کی نگرانی کریں گی اور خلاف ورزی پر کارروائی ہوگی۔

مزید :

صفحہ آخر -