مسلم لیگ ن کے ناراض گروپ کا مزید پارٹی ارکان کی حمایت کا دعویٰ

        مسلم لیگ ن کے ناراض گروپ کا مزید پارٹی ارکان کی حمایت کا دعویٰ

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) ناراض ن لیگی اراکین نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے ملاقاتیں جاری رکھنے کا فیصلہ کرتے ہوئے مزید ن لیگی ارکان کی حمایت کا دعویٰ کیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ ناراض لیگی ارکان کی وزیراعلی پنجاب سے قربتیں اورملاقاتیں رنگ لانے لگیں، ناراض لیگی ارکان مسلم لیگ ن میں موجود مزید ناراض ساتھیوں کو اپنے گروپ میں شامل کرنے کے لئے متحرک ہو گئے۔ناراض لیگی ارکان فی الحال پارٹی سے بھی رابطہ رکھیں گے اور وزیراعلی عثمان بزدار سے بھی ملاقاتیں جاری رکھیں گے، ناراض لیگی گروپ کو پیپلزپارٹی کے ایک رکن پنجاب اسمبلی کی پہلے ہی حمایت حاصل ہے۔ واضح رہے کہ ناراض ارکان کا گروپ وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار سے تین ملاقاتیں کر چکا ہے۔

ناراض ارکان

لاہور (آئی این پی) پنجاب میں مسلم لیگ ن کے اراکین صوبائی اسمبلی کو ساتھ ملانے کے لیے حکومتی سرگرمیاں تیز ہوگئی ہیں۔ تحریک انصاف کے رہنما ء یونس انصاری کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن کے35 سے 40 ارکان ہمارے ساتھ ہیں، ن لیگ کا فارورڈ بلاک بہت جلد سامنے آجائے گا۔جمعرات کو نجی ٹی وی ذرائع کے مطابق دومختلف عشائیوں میں مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کے رہنماں نے شرکت کی ہیں،اس حوالے سے تحریک انصاف کے رہنما ء یونس انصاری کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن کے35 سے 40 ارکان ہماریساتھ ہیں، ن لیگ کا فارورڈ بلاک بہت جلد سامنے آجائے گا۔یونس انصاری کا کہنا ہے کہ ان کی قیادت میں وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار سے ن لیگ کے6 اور پیپلزپارٹی کا ایک رکن پہلے ہی ملاقات کرچکا ہے۔دوسری جانب مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے پارٹی میں فارورڈ بلاک کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہاہے کہ ن لیگ پہلے سے زیادہ متحد ہے،تحریک انصاف کی جانب سے فارورڈ بلاک کا دعوی ایک کروڑ نوکریوں اور 50 لاکھ مکانوں کی طرح کھوکھلا اور جھوٹا ہے،سلیکٹڈ حکومت کی کارکردگی صفر ہے اور سب زبانی جمع خرچ ہے،عوام حکومت کو مسترد کرچکی ہے۔

ن لیگ

مزید :

صفحہ اول -