عیدالاضحی پر عوام ذمہ داری کا ثبوت دیں تو وباختم ہوجائیگی

عیدالاضحی پر عوام ذمہ داری کا ثبوت دیں تو وباختم ہوجائیگی

  

ملک کے ممتاز اور معروف گائناکالوجسٹ ہیلتھ پروفیشنل اور میڈ سیٹی ہسپتال لاہور کے چیف ایگزیکٹو پروفیسر ڈاکٹر ثاقب صدیق نے کہا ہے کہ 20 اگست تک کورونا وائرس بڑی حد تک پاکستان سے ختم ہو جائیگا، مگر اس کیلئے ضروری ہے کہ عوام ذمہ داری کا مظاہرہ کریں، عیدالاضحیٰ کو عیدالفطر کی طرح نہ منائیں۔ وہ ایشو آف دا ڈے میں گفتگو کر رہے تھے، پرو فیسر ثاقب صدیق نے مزید کہا یہ بات تسلیم کرنا ہوگی کہ ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور اضافہ مشترکہ غفلت، حماقت اور لا پروائیوں کا نتیجہ ہے، اگر ہم کورونا وائرس کی وباء کیخلاف ایک پیج پر آجاتے تو آج ملک میں تین لاکھ کے قریب متاثرین نہ ہوتے،انکامزید کہنا تھاجو ہونا تھا ہو گیا۔ بحیثیت قوم ہم نے وائرس سے بچاؤ کیلئے عالمی ادارہ صحت کے وضع کردہ قوانین اور ایس او پیز پر عمل کیا تو دعوے سے کہتا ہوں وسط اگست تک کورونا کا بڑی حد تک خاتمہ ہوجائے گا۔ اگر قوم نے عیدالفطر کی طرح کا طرزعمل اپنایا تو پھر اللہ ہی حافظ ہے۔انکامزید کہنا تھا کورونا میں اضافے کی ذمہ دار حکومت سے زیادہ عوام ہیں جنہوں نے ذمہ داری کا ثبوت نہیں دیا،اگر ایک عید پر کپڑے نہ خریدے جاتے تو کیا ہوتا کوئی قیامت نہیں آجانی تھی، عوام باہر نہ نکلتے،گھروں میں رہتے تو آج حالات یکسر مختلف ہوتے۔ عوام سے درخواست کرتا ہوں کہ عید الاضحی کے موقع پر وہ ذمہ داری کا ثبوت دیں تاکہ خود کو، اپنے اہل خانہ اور پیاروں کو مہلک وباء سے محفوظ رکھ سکیں۔مویشی منڈیوں یا بازاروں میں ایس او پیز پر مکمل عمل کریں۔گھر واپسی پر فوری طور پر ہاتھ منہ صابن سے اچھی طرح دھوئیں، ممکن ہو تو غسل کرلیں۔

ڈاکٹر ثاقب صدیق

مزید :

صفحہ اول -