ملک میں کورونا کے پھیلاؤ کی ذمہ دارخود حکومت ہے

ملک میں کورونا کے پھیلاؤ کی ذمہ دارخود حکومت ہے

  

معروف ہیلتھ پروفیشنل اور پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن سعید الٰہی گروپ کے سابق صدر ڈاکٹر سعید الٰہی نے کہا ہے کہ پاکستان سے کورونا ختم نہیں ہوا فلم ابھی باقی جو حکمرانوں کی بدنیتی پر مبنی ہے، وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کورونا وائرس کے میدان سے بھاگ چکی ہیں، حکمران کورونا وائرس کا پھیلاو روکنے میں بری طرح ناکام ہو چکے ہیں، آج ملک میں تین لاکھ کے قریب کورونا کے مریض حکمرانوں کی مجرمانہ غفلت کا نتیجہ ہیں اگر شروع میں یہ لوگ اپنی نیت صاف کر لیتے اور کام کرتے تو ہزاروں اموات نہ ہوتیں،ایشو آف دا ڈے میں گفتگو کرتے ہوئے انکامزید کہنا تھا حکمران کورونا وائرس کی جو تصویر پیش کر رہے ہیں یہ آندھی اور دھندلی ہے، قوم کو اصل حقائق نہیں بتائے جا رہے،بیان بازی پر اور بڑھکیں مارنے پر عمران خان اور ان کی ٹیم نے توجہ مرکوز کی،کورونا پر قابو پانے کیلئے یہ دو فیصد بھی انتظامات نہیں کئے گئے، ڈاکٹر سعید الٰہی نے کہا پنجاب ملک کا سب سے بڑا صوبہ ہے اور اس کا محکمہ صحت خاتون ڈاکٹر یاسمین راشد کے حوالے کیا گیا لیکن وہ کورو نا سے خوفزدہ ہوکر فرار ہو چکی ہیں، انہوں نے پنجاب کے ڈاکٹروں کو لاوارث چھوڑ دیا ہے، سیکرٹر یٹ میں ڈاکٹر داخل نہیں ہو سکتے، وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا میڈیکل کے شعبہ کی پہچان آن اور شان تھے وہ فرنٹ لائن پرکورونا سے لڑتے ہوئے شہید ہوگئے مگر وزیرصحت پنجاب یا کسی دوسرے افسر کو توفیق نہیں ہوئی کہ وہ ان کے جنازہ میں شرکت تا ان کے اہل خانہ سے تعزیت کر سکے۔وزیر صحت، پنجاب حکومت کو اور مرکز والوں کو چاہیے تو یہ تھا کہ ڈاکٹر کمال پاشا کو نشان شجاعت اور خدمت کا ایوارڈ دیا جاتا مگر افسوس کے کسی حکمران نے ان کے اہل خانہ سے تعزیت تک نہیں کی۔ اس سے فرنٹ لائن پر لڑنیوالے ڈاکٹروں کا مورال ڈاون ہوا میں دعوے سے کہتا ہوں کورونا حکومت کی غفلت سے ختم نہیں ہو رہا،انہوں نے کورونا وائرس کے ٹیسٹوں کی تعداد کم کر دی ہے جس کا مطلب حقیقت کو چھپانا ہے۔

ڈاکٹر سعید الٰہی

مزید :

صفحہ اول -