آئل ٹینکر ایسوسی ایشن کی ہڑتال، ملک بھر میں تیل کی ترسیل بند

        آئل ٹینکر ایسوسی ایشن کی ہڑتال، ملک بھر میں تیل کی ترسیل بند

  

کراچی(آ ن لائن) آل پاکستان آئل ٹینکر ایسوسی ایشن نے وفاقی حکومت کی جانب سے آئل ٹینکرز کا انکم ٹیکس اور ٹول ٹیکس ختم نہ کرنے پرتیل کی ترسیل بند کرنے کے ساتھ ملک بھر میں ہڑتال کردی جس کے باعث 48 گھنٹے بعد ملک بھر میں تیل کی قلت پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔آل پاکستان آئل ٹینکر ایسوسی ایشن کے سینئر وائس چیئرمین شمس شاہوانی نے ملک بھر میں ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ پورے ملک میں تیل کی ترسیل نہیں ہوگی۔حکومت ہمارے مطالبات پر غور کرے جب تک ہمارے مطالبات منظور نہیں ہوتے تیل کی سپلائی بند رہے گی۔شمس شاہوانی نے کہا 48 گھنٹے بعد ملک بھر میں تیل کی قلت ہوجائے گی، ہم مجبوراً احتجاج کررہے ہیں ہم نے حکومت سے بار بار مطالبہ کیا لیکن حکومت نے ہماری نہ سنی لہٰذا تنگ آکر ہڑتال کا فیصلہ کیا ہے۔ جبکہ سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ اویس شاہ نے آئل ٹینکرز کی ہڑتال کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت آئل ٹینکرز کا انکم ٹیکس اور ٹول ٹیکس ختم کرے۔عمران خان کو کسی باہر کے دشمن کی ضرورت نہیں ہے ان کے اپنے ہی گھر میں دشمن بیٹھے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آئل ٹینکرز کی ہڑتال سے ملک میں ایک بار پھر سے پیٹرول کی قلت بڑھ جائے گی۔عمران خان بنی گالا اور نتھیا گلی سے باہر نکل کران کے مطالبات حل کریں۔ اویس شاہ نے کہا کہ وفاقی حکومت آئل ٹینکرز کے ساتھ بیٹھ کر بات چیت کرے اور مسئلہ حل کرے۔

ٹینکر ہڑتال

مزید :

صفحہ اول -