نویں جماعت کے طلبا کی بورڈامتحانات میں شرکت خطرے میں پڑ گئی کیونکہ۔۔

نویں جماعت کے طلبا کی بورڈامتحانات میں شرکت خطرے میں پڑ گئی کیونکہ۔۔
نویں جماعت کے طلبا کی بورڈامتحانات میں شرکت خطرے میں پڑ گئی کیونکہ۔۔

  

لاہور (ویب ڈیسک) نویں جماعت کے طلباءکی لاہور بورڈ کے تحت رجسٹریشن کا معاملہ، سکول بند ہونے سے تعلیمی اداروں میں طلباءکی رجسٹریشن کا عمل شروع نہ ہوسکا، رجسٹریشن نہ ہونے کے باعث طلباءآئندہ سال نہم جماعت کا امتحان نہیں دے سکیں گے، لاہور بورڈ کے تحت ہر سال ساڑھے تین لاکھ طلباءامتحان دیتے ہیں۔

سٹی 42 کے مطابق لاہور سمیت پنجاب بھر میں نویں جماعت کے طلباءکی لاہور بورڈ کے تحت رجسٹریشن کا معاملہ تاحال جوں کا توں ہے۔ سکول بند ہونے سے طلباءکی رجسٹریشن کا عمل شروع نہ ہوسکا۔ رجسٹریشن نہ ہونے کے باعث طلباءآئندہ سال نہم جماعت کا امتحان نہیں دے سکیں گے۔ لاہور بورڈ نے رجسٹریشن کیلئے 31 اگست آخری تاریخ مقرر کررکھی ہے۔ چینل کے مطابق رجسٹریشن نہ ہوئی تو طلباءکو 2022 میں دہم کا امتحان دینے کی بھی اجازت نہیں ملے گی۔

سرکاری سکولوں میں نہم جماعت کے طلباءکی رجسٹریشن فیس 395 روپے ہے جبکہ پرائیوٹ سکولوں میں زیرتعلیم کی رجسٹریشن فیس 1195 مقرر کی گئی ہے۔ اساتذہ کا کہنا ہے کہ سکول بند ہونے کی وجہ سے طلباءرجسٹریشن فیس جمع نہیں کروارہے ہیں۔انکا کہنا ہے کہ رجسٹریشن فیس کی ادائیگی کیلئے طلباءسے مسلسل رابطہ میں ہیں۔

دوسری جانب ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی نے موبائل سکولز تیار کرنے کے لیے کام شروع کردیا۔ پہلے مرحلے میں ضلع لاہور کی پانچ تحصیلوں میں ایک، ایک موبائل بس فراہم کی جائے گی۔ ایک موبائل سکول میں 30 بچوں کے بیٹھنے کی گنجائش ہوگی۔ سی ای او ایجوکیشن پرویز اختر خان کا کہنا ہے کہ سکول کھلنے سے قبل موبائل سکول تیار کرلیے جائیں گے۔ دوسرے مرحلے میں مزید پانچ موبائل سکول تیار کیے جائیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کرونا کے باعث تعلیمی میدان میں بہت سے معاملات حل طلب ہے جن پر حکومت کو خصوصی توجہ دینا ہو گی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -