پنجاب میں ضمنی الیکشن کہانی! 

 پنجاب میں ضمنی الیکشن کہانی! 
 پنجاب میں ضمنی الیکشن کہانی! 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 وطن عزیز کے معاشی حالات دن بدن تیزی سے بہتری کی طرف گامزن ہیں تحریک انصاف کی حکومت کے چار سالہ دور کی تباہ کاریاں،مہنگائی،بیروزگاری کا طوفان،قومی اداروں کی بدحالی اور دیگر مسائل کے انبار لگے ہیں مسلح افواج،عدالت عظمیٰ کے خلاف بے بنیاد الزامات،سوشل میڈیا مہم کی و جہ سے عوام میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے۔ملک دشمن طاقتوں کو موقع مل رہا ہے، موجودہ حکومت نے ملک کی بقاء  کے لیے بڑے مشکل سیاسی فیصلے کیے ہیں ان شاء اللہ وہ وقت دور نہیں جب ملک میں خوشحالی،معاشی انقلاب آئے گا وزیراعظم میاں شہباز شریف اور وزیراعلیٰ پنجاب میاں حمزہ شہباز شریف دن رات عوام کی خدمت کے لیے کوشاں ہیں پنجاب میں 20صوبائی اسمبلی کے حلقوں میں آج ضمنی انتخابات ہونے جا رہے ہیں،مسلم لیگ ن کے امیدوار تقریباً سولہ انتخابی حلقوں میں جیتتے نظر آرہے ہیں میں ایسے وقت میں قوم سے مخاطب ہوں جب الیکشن سر پر ہیں اور تمام امیدوار مختلف ہتھکنڈوں سے آپ کا ووٹ حاصل کرنا چاہتے ہیں ووٹ مانگنا ہر امیدوا رکا آئینی حق ہے اور آزاد مرضی سے اس کا استعما ل آپ کا مکمل اختیار ہے آپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ ووٹ کا مطلب قومی نمائندوں کو اپنے ہاتھوں سے منتخب کرنا ہوتا ہے یہ ایک پرچی جسے ہم عموماًکوئی خاص اہمیت نہیں دیتے ہیں بہت بڑی طاقت ہے ہتھیا ر سے بھی بڑی طاقت!اس کا استعمال بناسوچے سمجھے یا دباؤ میں آ کر کرنا ناقابل ِ معافی جرم ہے کیا ہم یہ جرم کریں گے؟عمومی طور پر امیدواروں کے پاس کوئی منشور نہیں اور نہ ہی ان کاکوئی ذاتی کردار کسی قابل ہوتا ہے ان کا مقصد محض ایم این اے یا ایم پی اے بننا ہے تاکہ ان کی چودھراہٹ قائم ہو۔ہر جائز و ناجائز ذرائع سے مال بٹورا جاسکے اور ہر انداز سے ظلم و ناانصافی کو بڑھاوا ملے ان کی سیاست کا کل بھی مرکزی دائرہ یہی تھا اور آج بھی یہی ہے کیا ہم دیدہ دانستہ ان کے ساتھ شریک جرم ہوں گے؟اگر ہوں گے تو کیوں؟ہمیں خدا کو حاضر ناظر جان کر کھلے دل و دماغ کے ساتھ اس بارے میں سنجیدگی سے غور کرنا ہو گا!ہمیں یہ بات کبھی فراموش نہیں کرنا چاہیے کہ ہم اول و آخر مسلمان ہیں اور ایک روز اپنے تمام اعمال کے ساتھ بارگاہ اللہ رب العزت کے پیش ہوکر اپنے ایک ایک لمحے اور ہر چھوٹے بڑے عمل کا حساب دینا ہے۔وہاں ووٹ کے متعلق بھی ضرور بازپرس ہوگی اگر ہم نے اپنا حق رائے دہی ضمیر کے مطابق استعمال کیاتو بچ جائیں گے ورنہ نہ ہمارا کوئی ٹھکانہ ہو گا کیا ہم لوگوں کی رضا کے لیے اپنے خالق و مالک کو ناراض کردیں گے؟ یاکسی بھی صورت ایساکرنا چاہیے یہ سخت خسارے کا سودا ہوگا میرا خیال ہے کہ کوئی بھی ذی ہوش اپنے ہاتھوں سے اپنی  بربادی کا سامان نہیں کرے گا؟زندہ دلان لاہور کے حلقہ پی پی 170 میں نمایاں چار جماعتوں کے امیدور جن میں مسلم لیگ ن محمدامین ذوالقرنین،تحریک انصاف ظہیر عباس کھوکھر،جماعت اسلامی سے وقاص احمدبٹ اور تحریک لبیک کے قاری جمیل شرقپوری کے درمیان مقابلہ ہے۔جماعت اسلامی کے امیدوار وقاص احمد بٹ لاء  گریجویٹ،آٹو موبائیلز مینوفیکچرز کی صنعت سے وابستہ،کامیاب بزنس مین باوقار شخصیت ہیں وہ غریب پرور،اسلام دوست،یتیم بچوں کی مفت تعلیم کے قائم کردہ ایجوکیشن ٹرسٹ کے ٹرسٹی ہیں بلاشبہ مخلوق خدا کی خدمت کرنے والے ایک رحم دل انسان۔ اسلام میں ووٹ کی حقیقی قدر وقیمت،اہمیت اور افادیت کیا ہے؟اس حقیقت کو جاننے کے لیے واقعہ کربلا پر غور وفکر کرنا چاہیے۔یزید نے پاک امام حسین ؓ سے اپنی حکومت کی تائید کے لیے ووٹ ہی تو مانگا تھا۔آپ  نے تاریخ انسانیت کی لازوال و بے مثال قربانی تو پیش کردی لیکن ظالم و فاجر کے حق میں ووٹ کسی صورت نہ دیا آپ جس کو جی چاہے ووٹ دیں مگر دل اور ضمیر کی آواز پر ایسا نہیں کہ برادری ازم،تھانہ کچہری،دھڑے بندی یا کسی چھوٹے دنیاوی مفاد کے لیے!خدا وند کریم اس نازک موقع پر ہمیں درست فیصلہ کرنے کی توفیق عطاء  فرمائے آمین یارب العالمین 
چند لٹیروں نے جنگل میں شمعیں جلا دیں 
میرا ساتھی یہ سمجھا کہ منزل یہی ہے!

مزید :

رائے -کالم -