ناروے کی فوج میں خواتین کو بھرتی کیا جائے گا

ناروے کی فوج میں خواتین کو بھرتی کیا جائے گا

اوسلو (اے پی پی) ناروے پہلا یورپی ملک بنے گا جہاں خواتین کو زمانہ امن میں فوج میں بھرتی کیا جائے گا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ناروے کی پارلیمنٹ نے متعلقہ قانون منظور کیا ہے جس پر عمل درآمد 2015 میں شروع ہوگا۔ ناروے کی وزیر دفاع آنے گریٹے سٹریم ایرکسن نے اس فیصلہ کو تاریخ ساز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین ملک کی دفاعی صلاحیت پر مثبت اثر ڈال سکتی ھیں۔ ناروے میں فوجیوں کی تعداد میں کمی نہیں ہے۔

مذکورہ فیصلہ خواتین اور مردوں کے حقوق کے حقوق میں مساوات کو یقینی بنانے کیلئے کیا گیا ہے ۔ ناروے کے حکام کو توقع ہے کہ دیگر یورپی ممالک بھی ناروے کے نقش قدم پر چلیں گے۔

مزید : عالمی منظر