چوبرجی پاک ، راجگڑھ اور اولڈ رائفل رینج سکیم مسائل کا گڑھ ، مکین عدم تحفظ کا شکا ر

چوبرجی پاک ، راجگڑھ اور اولڈ رائفل رینج سکیم مسائل کا گڑھ ، مکین عدم تحفظ کا ...

لاہور(اقبال بھٹی )لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی پرانی سکیموں کا کوئی پرسان حال نہیں شہر کے وسطی ایریا میں ہونے کے باوجود اتھارٹی ان پر کوئی توجہ نہیں دے رہی جس کی وجہ سے ان میں ہر وقت دھول اڑتی رہتی ہے اوران سکیموں میں رہنے والے لو گ عدم تحفظ کا شکار ہو گئے ہیں جن میں اولڈ رائفل رینج سکیم ،چوبرجی پارک سکیم اور راجگڑھ سکیم شامل ہیں ٹوٹی پھوٹی سڑکیں صفائی کا ناقص انتظام اوردوسری سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے یہ سکیمیںآثار قدیمہ کا منطر پیش کر رہی ہیں تفصیلات کے مطابق 1970کی دہائی میں بنائی جانے والی سکیمیں اولڈ رائفل رینج ، چوبرجی پارک اور راجگڑھ وہ سکیمیں ہیں جن میں نہ تو سڑکیں بنائی گئی ہیں اور نہ ہی ان میں کسی قسم کی کوئی صفائی وغیرہ کی جاتی ہے ہر طرف گندگی کے ڈھیر لگے نظر آتے ہیں نہ ہی ایل ڈی اے ان سکیموں کو اپنے بجٹ میں شامل کرتی ہے۔ سٹی گورنمنٹ بھی ان سکیموں کی طرف کوئی توجہ نہیں دیتی۔لوگوں کا کہنا ہے کے کتنے عرصہ سے ان سکیموں میں کوئی بھی ترقیاتی کام نہیں ہوا ہے یہ ٹوٹی پھوٹی سڑکیں اور جگہ جگہ پڑے گند گی کے ڈھیر اس بات کی گواہی دے رہے ہیں کہ یہاں کبھی بھی کوئی ترقیاتی کام نہیں ہوا ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ جب کسی گھر کو ٹرانسفر کروانا ہوتا ہے تو پھر ایل ڈی اے کئی کئی گنا زیادہ ٹرانسفر فیس وصول کرتی ہے مگر ڈویلپمنٹ کی طرف کوئی توجہ نہیں دیتی اس حوالے سے جب ایل ڈی اے کے ا فسران سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کسی بھی سکیم کی ڈیویلپمنٹ اتھارٹی اس وقت کرتی ہے جب سکیم نئی بنائی جاتی ہے اس کے بعد تمام سکیموں میں ہر طرح کی ڈویلپمنٹ سٹی گورنمنٹ کے سپرد ہے اور وہ ہی ان سکیموں میں سڑکیں بناتی ہے اور وہ ہی صفائی کا خیال رکھتی ہے جب سٹی گورنمنٹ کے افسران سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ جب سکیمیں ایل ڈی اے کی ہیں تو پھر ڈویلپمنٹ بھی ایل ڈی اے ہی کرے گی

مزید : میٹروپولیٹن 1