مسیحی اتحاد میں شامل 7جماعتوں کا کرسچن الائنس سے باقاعدہ علیحدگی کا اعلان

مسیحی اتحاد میں شامل 7جماعتوں کا کرسچن الائنس سے باقاعدہ علیحدگی کا اعلان

لاہور(خبر نگار خصوصی ) مسیحی اتحاد میں شامل سات جماعتوں نے پاکستان کرسچن الائنس سے باقاعدہ علیحدگی کا اعلان کر دیا ہے۔علیحدگی اختیار کرنے والی جماعتوں اور رہنماؤں کے مطابق پاکستان کرسچن الائنس مقصد حاصل کرنے میں ناکام رہی ہے جس وجہ سے علیحدگی کا اعلان کیا ہے۔ جن جماعتوں اور رہنماؤں نے کرسچئین الائنس سے اپنی راہیں جدا کی ہیں ان میں ڈاکٹر پرویز اقبال پاکستان مسیحا پارٹی، صادق پنڈھار یونائیڈکرسچئین پارٹی، نسیم مٹو پاکستان مسیحی انصاف پارٹی، چوہدری نور الہٰی آزاد مسیحی لیگ پاکستان ،عزیز جان بھٹی کرسچئین لیبر پارٹی پاکستان ،ریاض حسین مٹو چئیرمین تحریک تحفظ حقوق اقلیت اور البرسٹ سندھو ایڈووکیٹ شامل ہیں۔واضح رہے کہ چند مسیحی جماعتوں نے متحد ہو کر ایک جماعت قائم کی تھی جس کا نام پاکستان کرسچئین اتحاد رکھا اور جوزف فرانسس کو ایک کا سر براہ منتخب کیا۔ جس کا مقصد تھا کہ پاکستان کی غیر مسلم اقلیتوں کو بلدیات اسمبلیوں اور سینٹ میں برائے راست نمائندگی دلوانے کی کوشش کی جائے گی۔2015کے بلدیاتی الیکشن میں حصہ لینے یا نہ لینے کیلئے اقلیتی عوام کے کردار کو وضع کرنا۔بلدیاتی الیکشن میں برائے راست نمائندگی یعنی سلیکشن نہیں الیکشن کے مؤقف پر اقلیتوں کی رائے عامہ کو ہموار کرنا تھا ۔

علیحدگی اختیار کرنے والی جماعتوں کے رہنماؤں کا کہنا ہے کہ پاکستان کرسچئین اتحاد مقاصد حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے جس وجہ سے علیحدگی اختیار کی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4