گرانفروشوں اور احترام رمضان ایکٹ کی خلاف ورزی کرنیوالوں کو نکیل نہ ڈالی جاسکی، رمضان بازار نمائشی قرار

گرانفروشوں اور احترام رمضان ایکٹ کی خلاف ورزی کرنیوالوں کو نکیل نہ ڈالی ...

ساہوکا، عبدالحکیم، کوٹ ادو، گگو منڈی، جتوئی، راجن پور، احمد پور شرقیہ، صادق آباد، چوک اعظم، لودھراں (نمائندگان) رمضان (بقیہ نمبر44صفحہ7پر )

المبارک کا دوسرا عشرہ شروع، گرانفروشوں اور احترام رمضان آرڈیننس کی خلاف ورزی کرنیوالوں کو نکیل نہ ڈالی جا سکی، شہریوں نے رمضان بازاروں کو نمائشی بازار قرار دیدیا، اس سلسلے میں ساہوکا سے نمائندہ پاکستان کے مطابق فتح شاہ کے علاقے،اڈا چھٹا میل،اڈا ساتواں میل،دربار فتح شاہ،اڈا کھادر نہر،امیر موڑ اور گر دونواح میں انتظامیہ آرڈیننس پر عمل کرانے میں ناکام ہو چکی ہیں اور رمضان المبارک کا تقدس پامال سر عام کھانے کے ہو ٹل،ناشتہ کی ریڑھیاں اور سردائی والوں نے ایک پردہ لگا کر اپنا دھندہ جاری رکھا ہوا ہے جہاں پر روزہ خور سر عام کھانے پینے میں مصروف کو ئی پوچھنے والا بھی نہیں مذہبی حلقوں نے اسے انتظامیہ کی ناہلی اور ملی بھگت قرار دیا ہے اورڈی سی او وہاڑی ،ڈی پی او وہاڑی سے اپیل کی ہے کہ وہ تمام تر سیاسی دباؤ بالا ئے کو طاق رکھ کر اس ماہ مقدس کا تقدس کو پامال کر نے والوں سے سختی سے نمٹ کر احترام رمضان المبارک کو یقینی بنائیں۔عبدالحکیم سے نمائندہ خصوصی کے مطابق عبدالحکیم اور علاقہ میں رمضان المبارک میں بھی تمام دن ہوٹل کھلے رہتے ہیں کچھ ہوٹلوں پر پردے لگاکر مختصر سا بورڈ (ہوٹل مسافروں اور مریضوں کے لئے کھلا ہوا ہے ) چسپاں کر دیا جاتا ہے ہوٹل کے اندر مقامی لوگ سارا دن کھابے کھاتے ہیں قانون کے مطابق رمضان المبارک میں صرف بس اسٹینڈ میں ہوٹل کھولنے کی اجازت ہے مگر اب پورے شہر میں روزہ خوروں کی خدمت کے لئے ہوٹل کھولے ہوئے ہیں اور تاحال کسی بھی ہوٹل والے اور کسی بھی روزہ خور کے خلاف نہ ہی کاروائی ہوئی ہے اور نہ ہی چالان کیا گیا ۔کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق رمضان المبارک شروع ہونے کے با وجود پولیس کی جانب سے شہر بھر میں کھلے ہوٹلوں پر چھاپے نہ مارنے کے باعث شہر بھر کے ہوٹل مالکان نے کھلے عام رمضان المبارک کا تقدس پامال کرنا شروع کر دیا ہے،ہوٹلوں کے آگے پردے لگا کر رمضان المبارک کے تقدس کو پامال کرتے ہوئے کھلے عام ہوٹلیں کھول لیں،جہاں سارا دن روزہ خوروں کا رش لگا رہتا ہے اور ماہ صیام کا سرعام مذاق اڑایا جا رہا ہے جسکی وجہ سے شہریوں اور روزہ داروں میں شدید تشویش اور بے چینی پائی جا رہی ہے،دریں اثناء عوامی وسماجی،سیاسی ودینی حلقوں اور شہریوں نے ڈی پی او مظفرگڑھ اویس احمد ملک سے مطالبہ کیا کہ شہر بھر میں ماہ مقدس کا مذاق اڑانے والے لالچی ہوٹل مالکان کو فوری گرفتار کیا جائے اور کوٹ ادو شہر میں عیدالفطر تک تمام ہوٹل بند کرائے جائیں۔ گگو منڈی سے نامہ نگارکے مطابق منڈی میں ان دنوں سبزی اور پھل فروش نے مصنوعی مہنگا ئی کا طوفان برباد کر رکھا اور من مانے ریٹ وصول کر کے شہریوں کی کھال اتارنے میں مصروف ہیں پھل اور سبز فروش مارکیٹ کمیٹی کے منظور شدہ نر خو ں کو نظر اندار کر کے من ما نی قیمت وصول کر رہے ہیں اور ما ہ رمضان کو بھی احترام نہیں کر تے جبکہ رمضان سے قبل کی قیمتوں کے مقابلہ میں 25تا 50فیصد خو د ساختہ اضا فہ کر دیا شہریوں نے کہا ہے کہ مہنگائی کو کنٹرول کر نے کے لئے پر ائس کنٹرول کمیٹی کو فعال کیا جائے اور گراں فروشو ں کے خلا ف قا نو نی کاروائی کی جا ئے ۔جتوئی سے نامہ نگار کے مطابق جتوئی رمضان بازار میں گراں فروشی ہونے لگی انتظامیہ بے بس ہوگئی ۔یا خود گراں فروشي ہونے لگی محمد امجد اور محمد حنیف نے کہا ہم رمضان بازار گئے اور 2x2حکومتی چینی خریدی اور وہاں وزن کیاسبزی فروش کے ترازو پر تولا گیا تو وہاں بھی 100گرام چینی کم تھی ان کے شور شرابے پر باقی لوگوں نے بھی خریدی ہوئی اشیاء کا وزن کیا تو وہ بھی کم تھی ۔ اسی طرح رمضان بازار شور مچ گیا ۔ شہریوں نے شدیداحتجاج کیا انتظامیہ کے خلاف طرح طرح کی باتیں کی جبکہ رمضان بازار میں کھڑے ہوئے لوگ انتظامیہ کی حرکتیں دیکھ کر رمضان بازار سے چلے گئے اور تمام مارکیٹ سے اشیاء خوردنوش خریدتے رہے ۔راجن پو ر سے نامہ نگار کے مطابق خادم اعلیٰ پنجاب کا مٹھن کوٹ میں رمضان پیکج اورسستا رمضان بازار میں ریلیف دھرے کا دھرا رہ گیا پھل فروٹ اور اشیاء خرونوش رمضان المبارک شروع ہونے سے قبل ہی قیمتیں بڑھ گئیں عوام کی امیدوں پر پانی پھر گیا ٹی ایم اے بلدیہ کے ملازمین سبسڈی کی رقم خورد برد کرنے کیلئے تیار بیٹھے ہیں اورحکومتی وزراء آفیسران خالی دورے کر رہے ہیں۔ آٹاانتہائی ناقص ہے اور اس کا معیار بھی خراب ہے اور اس کی نگرانی کیلئے انتہائی کرپٹ ترین فوڈ انسپکٹرتعینات کیا گیا ہے ۔ رمضان بازار میں دیگر پھل فروٹ سبزیاں اور خردنوش اشیاء ناقص ہیں اور مہنگی بیچی جا رہی ہیں رمضان بازار خالی پڑے ہیں اور ملازمین کی موجیں لگی ہوئی ہیں گراں فروشی عروج پر ہے نمائشی رمضان بازاروں میں خادم اعلیٰ کے ریلیف پیکج کے پوسٹر بینرخالی آویزاں ہیں رمضان بازار میں کمائی کے علاوہ سب ڈھونگ نظر آرہا ہے لاکھوں روپے کی سبسڈی کھوہ کھاتے میں جارہی ہے۔ عوامی سماجی حلقوں زاہد حسین،شوکت علی، محمد رفیق،ذوالفقار علی،محمد اقبال،عمران احمد ودیگر نے وزیراعلیٰ سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔لودھراں سے نما ئند ہ پا کستا ن کے مطابق ڈی سی او شاہد نیاز کی ہدا یت پر ضلع میں مصنو عی گرانی کنٹرول کرنے کے لئے پر ائس کنٹرول مجسٹریٹس کی مار کیٹوں کی ما نیٹرنگ جاری ہے۔ ضلع میں مختلف ایک سو بتیس مقا مات کی اچانک انسپکشن کی گئی اور تین سو ستر دوکانداروں کے نر خنا مے بھی چیک کئے گئے اور مقررہ نر خوں سے زائد ریٹ وصول کرنے باون دو کانداروں کو مجمو عی طور پر بتیس ہزار چار سو روپے جر مانہ عائد کیا گیا اے سی لودھراں محمد طیب خان نے آج دوکانداروں چھ ہزار روپے جر مانہ عا ئد کیا ۔ علاوہ ازیں اسسٹنٹ کمشنر محمد طیب خاں نے لودھراں شہر اور اس کے گردو نواح میں سوڈ اواٹر فیکٹر یوں کی اچانک انسپکشن کی اور اقبال سوڈا واٹر مین بازار لو دھراں ، رانا بلال سوڈا واٹر فیکٹری، مصطفی سوڈا واٹر فیکٹری اڈا پر مٹ اور خواجہ چوک پر ناصر سوڈا واٹر فیکٹری کو سر بمہر کر دیا ہے۔ انہوں نے اس مو قع پر شہریوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ماہِ صیام میں ناقص اور ملاوٹی مال کی فروخت ہر گز بر داشت نہیں کی جائے گی اور معصوم لوگوں کی صحت سے کسی کو نہیں کھیلنے دیا جائے گا۔ احمد پورشرقیہ سے سٹی رپورٹر کے مطابق شہریوں محمد اکبر، محمد یعقوب ، محمد خالد، آفتاب احمد ڈاھر، محمد قاسم کھوکھر، نے کہا کہ بازاروں میں کوئی چیز سوائے چینی ، اور آ ٹے کے سستی نہیں ہے۔ اور اشیا ء خور د و نوش کی معیار بھی بہتر نہیں ہے۔ حکومت صرف ذاتی تشہیر کے لئے یہ بازار لگا رہی ہے۔ اس سے بہتر ہے کہ کھانے پینے کی اشیاء پر لگا ئے گئے ٹیکسوں میں کمی کر دے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب ان سستا رمضا ن بازار کو فی الفور ختم کریں۔ صادق آباد سے تحصیل رپورٹرکے مطابق شہریوں عباس تاج‘ نزاکت علی‘ حبیب احمد چانڈیہ‘ملک غلام رسول‘ طالب حسین ‘ لالہ اکبر‘ محمد بلال ‘ فتح محمد و دیگر نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ رمضان پیکج کے نام پر غریب عوام کا اڑایاجانیوالا مذاق کا سلسلہ بند کیاجائے اور رمضان پیکج کے تحت لگائے گئے سستے بازار میں 30سے 40فیصد قیمتوں میں کمی کا اعلان کیاجائے ۔ جیسے جیسے عید کے دن قریب آرہے ہیں ذخیرہ اندوزوں نے عوا م کو لوٹنے کیلئے اشیاء خوردونوش کی بلیک مارکیٹنگ شروع کر دی ہے۔ چوک اعظم سے سٹی رپورٹر کے مطابق مرغی اوربیف فروش بارہ بجے دن تک گوشت کو فرخت کرنے کے پابند ہیں شاپ تک نہیں(ویٹرنری ڈاکٹر افراہیم کا موقف)تفصیل کے مطابق سستا رمضان بازارمیں مرغی کا گوشت نایاب ہوگیا تین بجے دن سے پہلے ہی مرغی کا گوشت رمضان بازار سے ختم ہوگیا اس امر میں ویٹرنری آفیسرڈاکٹر افراہیم نے اپنے موقف میں کہاکہ سستار مضان بازار میں قانون کے شیڈول کے مطابق مرغی اوربیف کو گوشت دن بارہ بجے تک فرخت کرنے کے پابند ہیں اس کے بعد ان پو کوئی پابندی نہیں ہے کہ وہ گوشت فروخت کریں یا نہ کریں۔علاوہ ازیں سستا رمضان بازارمیں گورنمنٹ کی جانب سے عوام کو ریلیف دینے کی خاطر یوٹیلٹی سٹور اور کریانہ سٹور زوالوں نے سٹال لگائے رکھے ہیں کریانہ سٹور والوں کی جانب سے مقامی ایم پی اے قیصر خان مگسی کے دست راست مقامی کونسلرچوہدری خلیل آرائیں نے سستا رمضان بازار میں کریانہ کا سٹال لگا یا ہوا ہے جب کہ اس کے مدمقابل یوٹیلٹی سٹور والوں کی جانب سے سٹال لگایا ہواہے تین روز قبل DCOلیہ نے مقامی ایم پی اے کو خوش کرنے کی خاطر یوٹیلٹی سٹورز کو سٹال پر چینی کی فروخت کو بند کروادیا جس کی وجہ سے عوام شدیدکو چینی خریدنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے کیونکہ کریانہ سٹور کے پرائیویٹ سٹال سے گھنٹوں لائن میں لگ کر چینی خریدنی پڑتی ہے۔ چوک اعظم میں لگائے گئے سستے رمضان بازارمیں ایگری کلچر(زراعت )کی جانب سے لگائے گے سٹال پر ناقص چنے اوردالیں فروخت کی جارہی ہیں یہ دالیں اورچنے انہوں نے نیچے چھپا کر رکھے ہوئے ہیں دیہاتوں سے آنے والوں کو یہ ناقص اشیاء مہنگے داموں فروخت کی جاتی ہیں دوسری جانب کریانہ سٹور کی جانب سے لگائے گے سٹال میں چینی میں پانی کی ملاوٹ کی جارہی ہے گزشتہ روز ایک شخص نے ان سے دو کلو چینی خرید کی اس چینی میں پانی کی ملاوٹ تھی جس پر یہ شخص رمضان بازارمیں بنائے گئے شکایات سیل میں گیا وہاں پر موجود آفیسران کو شکایات کی تو انہوں نے بجائے سٹال والے کے خلاف کاروائی نہیں کر سکتے۔ سستے رمضان بازارمیں سبزی اورپھل فروشوں نے میڈیا نمائندگان سے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ ہمیں جو ریٹ لسٹ دی جاتی ہے وہ لیہ سبزی منڈی کی دی جاتی ہے جس میں سبزیوں اورپھلوں کے ریٹ کم ہوتے ہیں اورہمیں چوک اعظم منڈی سے مہنگے داموں ملتے ہیں انہوں نے مزید کہاکہ سبزی منڈی لیہ سے بیوپاری سبزیاں اورپھل خرید کر کے چوک اعظم سبزی منڈی میں فروخت کرتے ہیں جوکہ ہمیں لیہ منڈی سے مہنگے داموں ملتے ہیں انہوں نے DCOلیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ہمیں چوک اعظم کی سبزی منڈی کے مطابق ریٹ لسٹ دی جائے یا ہمیں بھی سبسٹڈی دی جائے۔

رمضان بازار

مزید : ملتان صفحہ آخر