بجلی کے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج نے نینا حرام کر دیا :ڈاکٹر امجد علی

بجلی کے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج نے نینا حرام کر دیا :ڈاکٹر امجد ...

پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے ہاؤسنگ ڈاکٹر امجد علی نے کہا ہے کہ سوات کے عوام غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج کے عذاب سے تنگ آچکے ہیں اور اگر اپنی خاموشی کو توڑتے ہوئے احتجاج پر نکل آئے تو حالا ت کی خرابی کا ذمہ دار متعلقہ محکمہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ عوامی نمائندہ ہونے کی حیثیت سے وہ مسائل کو حل کرنے اور صبر سے کام لینے کی روش پر عمل پیرا ہیں لیکن شیڈول سے زیادہ لوڈ شیڈنگ کے باعث جو تکالیف سوات کے عوام برداشت کر رہے ہیں ان کے فوری ازالے اور عوام کوریلیف فراہم کرنے کی ضرورت ہے ڈاکٹر امجد علی نے کہا کہ مسلسل لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ ناقابل برداشت ہو چکاہے اور ایسا نظر آتا ہے کہ یہ تحریک انصاف کی صوبائی ھکومت کو بدنام کرنے اور عوام میں اس کے خلاف نفرت پید ا کرنے کیلئے امیر مقام اور وفاقی حکومت کی کارستانی ہے۔ انہوں نے کہا کہ امیر مقام سوات کے لوگوں سے لوڈشیڈنگ کے ذریعے انتقام لینا چاہتے ہیں اگر فاقی حکومت لوڈ شیڈنگ پر قابو نہیں پاسکتی تو پھر اس سلسلے میں بڑے بڑے دعوے کس لئے کر رہی ہے ۔ ڈاکٹر امجد علی نے کہا کہ امیر مقام اینڈ کمپنی 50kvٹرانسفارمر ای ایل آرELR میں لگاتاہے جو کہ واپڈا کے فنڈز سے لگتا ہے لیکن وہ اس کو خود کیش کراتا ہے اور پھر سارا کریڈٹ اپنے سرلینے کے کیلئے وہ اس پر بڑے بڑے اشتہارات لگاتا ہے اس سب کے باوجود جب سوات میں لوڈ شیدنگ اور کم وولٹیج کے مسائل سے عوام دو چار ہوتے ہیں تو وہ خاموش ہو جاتا ہے بلکہ صوبائی حکومت کے خلاف منفی پراپیگنڈہ شروع کردیا جاتاہے انہوں نے کہا کہ وفاقی محکموں خاص طور پر این ایچ اے کا جی ٹی روڈ ہو، واپڈا ہو یا سوئی گیس انکے ہاتھوں سوات کے عوام خوار ہو رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ واپڈا کو اپنا قبلہ درست کرنا چاہئیے ایک طرف اس کے ہاتھوں عوام کو بجلی کی تکالیف کا سامنا ہے تو دوسری طرف اس نے چکدرہ میں پنی ورکشاپ کو بھی ختم کر دیا ہے اور ورکشاپ کے ختم کرنے میں بھی مشیر وزیر اعظم ملوث ہے۔ معاون خصوصی نے کہا کہ انہوں نے کروڑوں روپے ورکشاپ میں عوام کو سہولت فراہم کرنے کیلئے دیئے تھے جن سے 272 ٹرانسفارمر ان کے حلقہ میں ریپئر ہوئے تھے مگر انہیں بھی بند کروادیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آٹھ ماہ قبل بھی انہوں نے 40لاکھ روپے جمع کروائے مگر واپڈا نے ان کی فراہمی کو غیر قانونی قرار دیا اور حلقہ کے عوام ٹرانسفارمر کی ریپئرنگ کے لیے مارے مارے پھر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ سوات کے عوام سے تحریک انصاف کی حمایت کابدلہ لینے کی روش ترک ہونی چاہئیے اورعوام کے مسائل حل کرنے میں تعاون کرنا چاہئیے تاکہ اس گرمی اور رمضان المارک میں عوام سکھ کا سانس لے سکیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر