سپریم کورٹ نے چوری شدہ کھاد فروخت کرنے والے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کر دی

سپریم کورٹ نے چوری شدہ کھاد فروخت کرنے والے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کر دی
سپریم کورٹ نے چوری شدہ کھاد فروخت کرنے والے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کر دی

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے چوری شدہ کھاد فروخت کرنے والے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کر دی۔ عدالت نے ریمارکس دیے کہ بندوں کے حقوق معاف کرنے کا اختیار اللہ تعالیٰ نے اپنے پاس بھی نہیں رکھا۔ سپریم کورٹ میں چوری شدہ کھاد فروخت کرنے والے ملزم کی درخواست ضمانت کی سماعت ہوئی۔ دوران سماعت درخوات گزار کے وکیل نے کہا کہ ملزم 11ماہ سے جیل میں ہے اور نیب نے تاحال ریفرنس بھی فائل نہیں کیا۔ جس پر جسٹس طارق مسعود نے استفتار کیا کہ ریفرنس فائل کیوں نہیں ہوا؟

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

عدالت کے استفسار پر پراسیکیوٹر نیب نے عدالت کو بتایا کہ ملزم عمران محسن نے چوری شدہ کھاد کے 250 ٹرک فروخت کئے جس کے خلاف ریفرنس ٹرائل کورٹ میں دائر کر دیا گیا ہے۔ جسٹس دوست محمد نے ریمارکس دیئے کہ روزہ داروں کا حق کھایا گیا ہے، حالات یہ ہے کہ لوگ سڑکوں پر افطار کرنے پر مجبور ہیں ، بندوں کے حقوق معاف کرنے کا اختیار اللہ تعالیٰ نے اپنے پاس بھی نہیں رکھا ، صدق دل سے توبہ کریں تو سارے گناہ معاف ہوجاتے ہیں ۔ عدالت نے ملزم عمران محسن کی درخواست ضمانت خارج کر دی۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : اسلام آباد