فوجی بغاوت کے نتیجے میں ہٹائے جانے والے مصر کے سابق صدر محمد مرسی کمرہ عدالت میں ہی انتقال کرگئے

فوجی بغاوت کے نتیجے میں ہٹائے جانے والے مصر کے سابق صدر محمد مرسی کمرہ عدالت ...
فوجی بغاوت کے نتیجے میں ہٹائے جانے والے مصر کے سابق صدر محمد مرسی کمرہ عدالت میں ہی انتقال کرگئے

  


قاہرہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) مصر کے سابق صدر محمد مرسی دوران قید کمرہ عدالت میں انتقال کرگئے۔ وہ جمہوری طریقے سے منتخب ہونے والے مصر کے پہلے صدر تھے جنہیں فوجی بغاوت کے نتیجے میں معزول کرکے جیل میں ڈال دیا گیاتھا۔

مصر کے سرکاری میڈیا کے مطابق سابق صدر محمد مرسی پیر کے روز ایک عدالت میں پیش ہوئے  جہاں پیشی کے دوران وہ وفات پاگئے۔ عدالتی سماعت کے دوران  انہیں کمرہ عدالت میں سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا جس کے باعث وہ تھوڑی ہی دیر میں وفات پاگئے۔

خیال رہے کہ مصر پر ہمیشہ سے ہی ڈکٹیٹرز کی حکومت رہی ہے لیکن محمد مرسی پہلے صدر تھے جو جمہوری طریقے سے منتخب ہوئے تھے۔ 2011 میں عرب بہارآئی تو اس وقت کے صدر حسنی مبارک کے 30 سالہ اقتدار کا خاتمہ ہوا جس کے بعد محمد مرسی مصر کے پہلے جمہوری صدر منتخب ہوئے۔ وہ اخوان المسلمون کے پلیٹ فارم سے صدر منتخب ہوئے تھے لیکن ایک سال بعد 2013 میں ایک اور فوجی بغاوت کے نتیجے میں ان کے اقتدار کا خاتمہ کرکے انہیں جیل میں ڈال دیا گیا جبکہ ان کی جماعت پر پابندی عائد کردی گئی تھی۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /عرب دنیا