ماتحت عدالتوں کے 23ججوں کے تبادلوں اور تعیناتیوں کے احکامات جاری

ماتحت عدالتوں کے 23ججوں کے تبادلوں اور تعیناتیوں کے احکامات جاری

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ نے ماتحت عدالتوں کے 23ججوں کے تبادلوں اور تعیناتیوں کے احکامات جاری کردیئے ہیں،ان میں سے 9سیشن ججوں کی خدمات وفاقی حکومت کے سپرد کی گئی ہیں جبکہ تبدیل ہونے والے دیگر ججوں میں 2سیشن جج،5ایڈیشنل سیشن جج اور7سول جج شامل ہیں،جن ججوں کی خدمات وفاقی حکومت کے سپرد کی گئی ہیں انہیں پنجاب میں مختلف بینکنگ کورٹس کے جج مقررکیا جارہاہے،ان میں سے ندیم گلزار کو بینکنگ کورٹ نمبر ایک لاہور،محمد ساجد علی کو بینکنگ کورٹ نمبر4لاہور، غلام مرتضیٰ کو بینکنگ کورٹ نمبر6لاہور، شبیر حسین کو بینکنگ کورٹ نمبر ایک گوجرانوالہ، سید داور ظفر علی کو بینکنگ کورٹ نمبر دو فیصل آباد، محمد ابراہم اصغر کو بینکنگ کورٹ ساہیوال اور ملک خضر حیات خان کو بینکنگ کورٹ سرگودھا کا جج مقرر کیا جارہاہے جبکہ راجہ پرویز اختر کو جج سپیشل کورٹ (بینکنگ جرائم)لاہوراورمنظر علی گل کو سپیشل کورٹ (بینکنگ جرائم)ملتان کا جج مقرر کیا جارہاہے،،تبدیل ہونے والے سیشن ججوں میں سے سیشن جج لیہ اعجاز حسن اعوان کو لاہورہائی کورٹ میں رپورٹ کرنے کے لئے کہاگیاہے جبکہ ان کی جگہ ملک علی زوالقرنین کو لیہ کا سیشن جج مقررکیاگیاہے،تبدیل ہوانے والے ایڈیشنل سیشن ججوں میں سے نقیب شہزاد کا فیصل آباد سے راولپنڈی،اشرف احمد رانا کا راولپنڈی سے فیصل آباد،ثمینہ اعجاز چیمہ کا گوجرانوالہ سے میانوالی،محمد حسین کا تونسہ شریف سے ملتان اورعبدالرحمن محمدعارف کا گوجرانوالہ سے تونسہ شریف تبادلہ کردیاگیاہے،جن سول ججوں کے تبادلے کئے گئے ہیں ان میں سے تکاثر احسن کا کلرسیداں سے پسرور،امیر احمد کا پسرور سے کلرسیداں،شازیہ منور کا گجرات سے لاہور، صلاح الدین یاصر کا جتوئی سے حاصل پور،سائرہ چودھری کا چنیوٹ سے لاہور،قیصر اقبال کا حاصل پور سے جتوئی اور ریحان الحسن کا ننکانہ صاحب سے کہروڑ لعل عیسن تبادلہ کیاگیاہے۔

تبادلے

مزید :

صفحہ آخر -