طلبہ کی صحیح کردار سازی اساتذہ کا اولین فرض ہے،رفیق تارڑ

  طلبہ کی صحیح کردار سازی اساتذہ کا اولین فرض ہے،رفیق تارڑ

  

لاہور(لیڈی رپورٹر)ہمارے ملک کے بنیادی نظریے کی اساس نظریہئ اسلام پر ہے اور یہی ہمارا نظریہئ حیات بھی ہے۔ نظریاتی سمر سکول میں طلباوطالبات کی تعلیم و تربیت کا اس انداز میں اہتمام کیا گیا ہے کہ وہ اپنی شاندار تاریخ، اسلامی اقدار اور وطن عزیزکی نظریاتی بنیادوں سے بخوبی آگاہ ہو جائیں۔طلبا وطالبات کی صحیح کردار سازی اساتذہئ کرام کا فرض اولین ہے۔ ان خیالات کااظہار تحریک پاکستان کے مخلص کارکن‘ سابق صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان وچیئرمین نظریہئ پاکستان ٹرسٹ محمد رفیق تارڑ نے نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام جاری اپنی نوعیت کے منفرد پروگرام نظریاتی سمر سکول کے 20 ویں سالانہ آن لائن تعلیمی سیشن کے پہلے روز اپنے صدارتی خطاب کے دوران کیا۔

  اس سکول کا ماٹو ”پاکستان سے پیار کرو“ ہے۔ محمد رفیق تارڑ نے اپنے خطاب میں کہا کہ کرونا وباء نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے، اس وباء کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے حکومت نے ہر قسم کے اجتماعات پر پابندی لگا رکھی ہے چنانچہ اس سال نظریاتی سمر سکول کا 20واں سالانہ تعلیمی سیشن آن لائن منعقد کیا جا رہا ہے۔ آپ کو یہاں جو باتیں سکھائی جائیں گی‘ انہیں نہ صرف خود یاد رکھیں بلکہ اپنے دوستوں تک بھی پہنچائیں۔ ہم آپ کو بتانا چاہتے ہیں کہ پاکستان کیوں بنا‘ کیسے بنا اور اسے بنانے کی خاطر آپ کے بزرگوں نے کتنی قربانیاں دیں۔ یہ باتیں جان کر آپ پاکستان سے اور زیادہ محبت کرنے لگیں گے اور بڑے ہو کر اس کی حفاظت کی خاطر جان تک دینے کیلئے تیار ہو جائیں گے۔انہوں نے کہا طلبا وطالبات کی صحیح کردار سازی اساتذہئ کرام کا پہلا فرض ہے، اس فرض سے صحیح معنوں میں عہدہ برآہونیوالے اساتذہئ کرام ہی قوم کے معمار کہلانے کے حق دار ہیں۔طلبا و طالبات اساتذہئ کرام کی عزت و احترام کریں۔ انہوں نے کہا کہ مجید نظامی مرحوم کا لگایا ہوا یہ پودا اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے اب ایک تناور درخت کی صورت اختیار کرچکا ہے۔ نظریاتی سمر سکول کے پہلے روز آن لائن سیشن میں سابق چیئرمین نظریہئ پاکستان ٹرسٹ مجید نظامی مرحوم کے خطاب کی ویڈیو ریکارڈنگ بھی دکھائی گئی۔ اس خطاب میں مجید نظامی کا کہنا تھا جبہم نے فیصلہ کیا کہ سمرسکول شروع کریں گے،تومیں نے کہااس کانام محض سمرسکول کافی نہیں بلکہ نظریاتی سمر سکول ہوگا جہاں بچوں کو نظریہ ئ پاکستان کے بارے میں آگہی فراہم کرنے کے علاوہ انہیں تحریک پاکستان، نظریہئ پاکستان اور قیام پاکستان کی خاطر دی جانیوالی قربانیوں سے آگاہ کیا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ طلبا و طالبات سب سے زیادہ توجہ اپنی پڑھائی پر دیں اور تاریخ کا ضرور مطالعہ کریں تاکہ انہیں حقائق سے آگہی حاصل ہو سکے۔نئی نسل قائداعظمؒ، علامہ محمد اقبالؒاور مادرملتؒ کو کبھی نہ بھولیں۔ان ہستیوں کی بدولت ہی آج ہم آزاد فضاؤں میں سانس لے رہے ہیں۔

  

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -