ماہرین نے کورونا کے تشویشناک مریضوں کی جان بچانے والی دوا تلاش کر لی

        ماہرین نے کورونا کے تشویشناک مریضوں کی جان بچانے والی دوا تلاش کر لی

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) کورونا وائرس کے تشویشناک مریضوں کو ایک عام سٹیرائیڈ، ڈیکسامیتھازون کی ہلکی مقدار دے کر مرنے سے بچانے کا کامیاب تجربہ کرلیا گیا۔ امریکی ٹی وی چینل سی این این کے مطابق برطانیہ کے طبی سائنس دانوں کی ابتدائی تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ وہ مریض جن کو وینٹی لیٹر یا آکسجین کی کمی دور کرنے کی ضرورت ہوتی ہے ان کیلئے یہ دوا بہت سود مند ثابت ہوئی جو ویکسین کی غیر موجودگی میں دوسرے علاج یا طریقوں کی نسبت سب سے بڑا بریک تھرو ہے، "ڈیکسا میتھا زون "استعمال سے وینٹی لیٹر پر موجود مریضوں کی شرح اموات 40 فیصد تک کمی ہوئی۔ آکسفورڈ یونیورسٹی کے ریسرچرز کی ٹیم میں شامل پروفیسر مارٹن لینڈرلے نے واضح کیا کہ بہتر حالت کے مریضوں پر یہ دوا استعمال نہیں کرنی چاہئے۔ صرف آکسیجن کی کمی کے شکار شدید مریضوں کو یہ سٹیرائیڈ کم مقدار میں دیا جائے تو ان کو بچانے کیلئے یہ بہت موثر ثابت ہوا ہے۔ یہ دوا گولی یا انجکشن کی صورت میں روزانہ چھ ایم جی10 دن تک دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس دواکے استعمال کے کوئی نمایاں سائیڈ ایفیکٹ محسوس نہیں ہوئے۔ محققین کا کہنا ہے کہ کورونا کے 20 میں سے19 مریض ڈیکسا میتھا زون کے استعمال سے صحت مند ہوگئے۔

کورونا/دوائی

مزید :

صفحہ اول -