پٹرول بحران، 3نجی کمپنیاں ذمہ دارقرار، تحقیقاتی رپورٹ وزارت پٹرولیم کو ارسال

  پٹرول بحران، 3نجی کمپنیاں ذمہ دارقرار، تحقیقاتی رپورٹ وزارت پٹرولیم کو ...

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزارت پٹرولیم کی بنائی گئی تحقیقاتی کمیٹی نے پٹرول بحران کا ذمہ دار نجی تیل کمپنیوں کو قرار دے کرابتدائی رپورٹ وزارت پٹرولیم کو ارسال کردی۔ جس میں بتایا گیا ہے کہ نجی تیل کمپنیاں موجودہ بحران کی ذمہ دار ہیں جبکہ بحران میں پی ایس او کے آئل ٹرمینلز 24 گھنٹے کام کرتے رہے۔رپورٹ میں بتایا گیاہے کہ یہ تینوں تیل کمپنیاں ذخیرہ اندوزی اور بلیک مارکیٹنگ میں ملوث ہیں۔رپورٹ کے مطابق 5 نجی تیل کمپنیوں کے ٹینکس میں سیفٹی رولز اینڈ ریگولیشن کی خلاف ورزیاں بھی پائی گئیں۔رپورٹ میں کمیٹی نے مؤقف اختیار کیا کہ کسی بھی حادثے کی صورت میں بہت بڑا نقصان ہوسکتا ہے لہٰذا تمام کمپنیوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔کمیٹی نے سفارش کی کہ ان کمپنیوں کو طے کردہ معیار پر پورا نہ اترنے پرشوکازنوٹس دیا جائے اور ایک ماہ میں ان کی کارکردگی بہتر نہیں ہوتی تو لائسنس معطل کیا جائے۔کمیٹی نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ بیشتر کمپنیوں نے نجی آئل ٹرمینلز پر کیمیکلز سٹوریج کیلئے ٹینکس بنائے جسے بعد میں انہیں پیٹرولیم مصنوعات سٹوریج میں تبدیل کردیا گیا، اس تمام صورتحال میں ایچ ڈی آئی پی،ایکسپلوزو ڈیپارٹمنٹ کو سخت ایکشن کے اختیارات دئیے جائیں۔بحران ختم کرنے کیلئے کمیٹی کا کہنا تھا کہ آئل ریفائنریز ملکی اثاثہ ہیں، ضروری ہے کہ وہ جون اور جولائی میں زیادہ کام کریں۔

پٹرول بحران

مزید :

صفحہ اول -