کورونا وائرس‘ ملک میں خطرے کی گھنٹی بج گئی‘ ڈاکٹر ذیشان قیصر

      کورونا وائرس‘ ملک میں خطرے کی گھنٹی بج گئی‘ ڈاکٹر ذیشان قیصر

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے نمائندے، طب کے شعبہ تحقیق سے منسلک ملک کے معروف و نامور ڈاکٹر ذیشان قیصر نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی علامات میں تبدیلی رونما ہو ر ہی ہے‘ تاہم گرم موسم کا کوئی خاص اثروائرس پر اثر انداز نہیں ہو ر ہا‘جولائی کے آ خری تک کورونا کیسز کی تعداد 3سے4 لاکھ تک پہنچ سکتی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز صحافیوں کے ایک وفد سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ ڈاکٹر ذیشان قیصر کا کہنا تھا کہ ملک میں کورونا وائرس کے حوالے سے خطرے کی گھنٹی بج گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حفاظتی اقدامات سے کورونا پر قابو پایا جاسکتا ہے، موجودہ صورتحال میں کوئی تبدیلی نہ کی گئی تو کورونا کیسز کی تعداد 3 سے 4 لاکھ تک پہنچ سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ جون کے آخر تک کورونا مریضوں کی تعداد 3 سے 4لاکھ تک پہنچنے کا خدشہ ہے اور موجودہ صورتحال برقرار رہی تو جولائی کے آخر تک کورونا کیسز میں 8 سے 10 گنا تک اضافہ یعنی مریضوں کی تعداد 10 لاکھ تک پہنچ سکتی ہے۔ ڈاکٹر ذیشان قیصر کا کہنا تھا کہ حکومت شہریوں کی زندگی کی حفاظت کے لیے اقدامات کر رہی ہے اور کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سخت اقدامات بھی کیے جا ر ہے ہیں‘حکومت ضابطہ کار کی خلاف ورزی پر سخت کارروائی کرے‘ جن علاقوں میں کورونا کیسز زیادہ ہوں گے، وہاں اسمارٹ لاک ڈاؤن کیا جائے۔انہوں نے مزید بتایا کہ اب کورونا وائرس کی علامات میں تبدیلی رونما ہو ر ہی ہے‘ اب بچے بھی زیادہ متاثر ہو ر ہے ہیں‘اب کڈنی‘ جگر‘ہاتھ‘پیر میں درد اور تیز بخار کا ہونا بھی کورونا وائرس کی علامات سمجھا جا ر ہا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -