کرونا وائرس بے قابو، نشتر میں 7مریض جاں بحق، 9افراد کی حالت نازک

کرونا وائرس بے قابو، نشتر میں 7مریض جاں بحق، 9افراد کی حالت نازک

  

ملتان (نمائندہ خصوصی) کورونا وائرس کے پازیٹیو کیسز کے بعد، ملتان کے 6 علاقوں کو مکمل سیل کرنے کی تجویز سامنے آگئی، 39 علاقوں میں جزوی لاک ڈاون جاری ہے جبکہ 13 علاقوں کو ڈس انفیکشن کے بعد ڈی سیل کر دیا گیا، تفصیل کے مطابق کورونا وائرس (بقیہ نمبر35صفحہ7پر)

کے باعث بڑھتے ہوئے کیسز پر محکمہ صحت ملتان نے ضلعی انتظامیہ کو شاہ رکن عالم اور نیو ملتان کے 3،3 بلاکس کو مکمل طور پر سیل کرنے کی تجویز دی ہے، اس کے ساتھ ساتھ رشید آباد، ایم ڈی اے، گلگشت کالونی، حسن پروانہ، رحیم چوک سمیت 39 علاقوں میں جزوی طور پر لاک ڈاون جاری ہے، جبکہ دیگر 13 علاقوں کو ڈس انفیکشن ہونے کے بعد ڈی سیل کر دیا گیا ہے۔نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ 48 گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا 07 مریضوں نے دم توڑ دیا،کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 105 ہو گئی، آئی سو لیشن کے چھ وارڈز میں کورونا میں مبتلا زیر علاج مریضوں کی تعداد 80ہو گئی،09مریضوں کی حالت تشویشناک ہے فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان کے مطابق نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ 48 گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا 07مریض نشتر ہسپتال میں دم توڑ گئے،یوں نشتر ہسپتال میں یکم اپریل سے 16جون کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 105 ہو گئی ہے،جبکہ گزشتہ 48 گھنٹوں میں کورونا میں مبتلا ملتان کے 69 سالہ طارق،65 سالہ جمیل،56 سالہ کامران،65 سالہ اشرف،39 سالہ گلناز،خانیوال کی 55 سالہ فرحت اور شور کوٹ جھنگ کے 43 سالہ اسلم نے دم توڑا،ادھر نشتر ہسپتال کے چھ آئی سو لیشن وارڈز میں اس وقت کورونا میں مبتلا 80مریض زیر علاج ہیں جبکہ 20 مریضوں کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے، جن میں سے 09 مریضوں کو وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ کورونا کے شبہ میں 39 مریض زیر علاج ہیں,جن کی رپورٹس کا انتظار ہے،ادھر فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان ارشد کے مطابق نشتر ہسپتال میں اب تک ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر اور قرنطینہ،تبلیغی مراکز سے لائے گئے 16 ہزار 159 افراد کے نمونوں کے کورونا کے تشخیصی ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے 2 ہزار 252 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ نشتر ہسپتال سے 185 افراد کو کورونا سے صحت یاب ہونے پر ڈسچارج بھی کیا جا چکا ہے جبکہ 54 افراد پر مشتمل نشتر ہسپتال کا طبی عملہ جس میں 35 ڈاکٹر,13 نرسز اور پیرا میڈیکل اسٹاف شامل تھا اب تک کورونا میں مبتلا ہوئے ہیں جن میں سے بیشتر صحت یاب ہو کر دوبارہ ڈیوٹی جوائن کر چکے ہیں،ادھر ینگ نرسز ایسوسی ایشن کی جنرل سیکرٹری صائمہ یامین نے احتجاج ریکارڈ کرواتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ تین روز کے دوران 07 میل نرس اور دیگر 08 سے زائد فی میل نرسنگ سٹاف کورونا میں مبتلا ہو چکا ہے اور انتظامیہ نرسوں سے ہتک آمیز رویہ اپنائے ہوئے ہے اضافی ڈیوٹیاں لی جا رہی ہیں نہ صرف نرسز بلکہ ان کے اہل خانہ بھی کورونا سے متاثر ہو رہے ہیں،اس وقت 03 نرسوں کا ہسپتال میں علاج جاری ہے جبکہ کورونا میں مبتلا دیگر نرسز نے گھر میں آئی سو لیشن اختیار کر رکھی ہے۔

نشتر ہلاکتیں

مزید :

ملتان صفحہ آخر -