کرونا سے ہلاکتیں، ڈیرہ، جام پور، راجن پور میں ڈاکٹر خوفزدہ، کلینک بند

  کرونا سے ہلاکتیں، ڈیرہ، جام پور، راجن پور میں ڈاکٹر خوفزدہ، کلینک بند

  

جام پور (نامہ نگار)جام پور ٹی ایچ کیو ہسپتال کے سابق سنیئر میڈیکل افسر وچیف فزیشن ڈاکٹر جاوید اقبال باجوانی کی کرونا وائرس سے ہلاکت کے بعد جام پور۔ ڈیرہ۔ راجن پور سمیت دیگر ملحقہ علاقوں میں خوف نے ڈیرے ڈال لیے ہیں۔ سب ڈویژن (بقیہ نمبر37صفحہ7پر)

جام پور میں تما م ڈاکٹروں نے مریضوں کو چیک کرنا چھوڑ دیا۔ علاج معالجہ کی غرض سے انے والے مریض ہسپتالوں میں ڈسپنسروں اور دیگر کے رحم کرم پر ہیں۔ علاج کی غرض سے آنے والے مریض میڈیا کے سامنے پھٹ پڑے ہیں انہوں نے کہا کہ ہم کہاں جائیں۔ اس دور میں علاج نہ ملنے پر لوگ مررہے ہیں۔ جام پور میں علاقہ پچادھ۔ داجل۔ ہڑند۔ ٹھل جانن۔ اور دریائے سندھ کی پٹی سے لانے والے مریض سارا دن ہر ہسپتال کا چکر لگاتے رہے شدید گرمی میں کئی مریض بے ہوش ہو گئے ہیں۔ سروے کے مطابق ڈاکٹر منیر بھٹی۔ ڈاکٹر مختیار خان۔ ڈاکٹر عبداللہ پتافی۔ فاروق ملک۔ ڈاکٹر ندیم احمدانی۔ ڈاکٹر محبوب رشید۔ ڈاکٹر عبدالکریم خان۔ ڈاکٹر شاہد کھوکھر۔ ڈاکٹر محمد اکرم سمیت دیگر کے کلینک بند پائے گئے ہیں۔ بعض ڈاکٹر وں نے اپنے اپ کو گھروں میں ائی سولیٹ کر دیا ہے دوسری طرف جام پور میں بنک الفلاع نے ایک ہفتہ کیلے بند کو بند کرکے ڈیرہ اور راجن پور سے رجوح کرنے کا بنک کے بائر بورڈ اویزاں کر دیا ہے۔شہر بھر میں خوف پایا جاتا ہے۔ ضلع وتحصیل انتظامیہ نے ایس او پی پر عمل درامد کرنے کے لیے ماتحت اداروں کو سخت ہدایات جاری کر دی ہیں۔

کلینک بند

مزید :

ملتان صفحہ آخر -