کرونا سے تعلیمی ادارے بند، تنخواہیں نہ ملنے پر ٹیچرز، سٹاف ذہنی مریض

  کرونا سے تعلیمی ادارے بند، تنخواہیں نہ ملنے پر ٹیچرز، سٹاف ذہنی مریض

  

بھکر(نامہ نگار)کورونا وبا کی وجہ سے نجی تعلیمی اداروں کی بندش کے سبب ان میں تعینات تدریسی اور غیر تدریسی ملازمین(بقیہ نمبر34صفحہ7پر)

تنخواہیں نہ ملنے پر فاقوں کا شکار ہوگئے۔ ضلع میں نجی تعلیمی اداروں میں بڑی تعداد میں اساتذہ اور غیر تدریسی ملازمین کام کرتے ہیں مذکورہ سکول اور کالج کورونا وائرس کا ممکنہ پھیلاؤ روکنے کے لئے حکومت کی طرف سے نافذ لاک ڈاؤن کے سبب کوئی تین ماہ سے بند ہیں۔مذکورہ اداروں میں تعینات ملازمین کو اگرچہ ابھی تک فارغ نہیں کیا گیا ہے لیکن سوائے چند ایک کے باقی سکولوں اور کالجوں کی انتظامیہ نے کمزور مالی حالات کے سبب اساتذہ اور غیر تدریسی ملازمین کو تنخواہیں نہیں دی ہیں۔ حکومت نے اعلان کیا تھا کہ کورونا وبا کی وجہ سے بیروزگار ہونیوالوں کو مالی مدد فراہم کی جائے گی لیکن نجی تعلیمی اداروں کے اساتذہ اور دیگر ملازمین کا کسی نے پوچھا تک نہیں جب سے نجی تعلیمی ادارے بند ہوئے ہیں اساتذہ اور کلاس فور و دیگر ملازمین کو تنخواہیں نہیں ملیں اور نہ ہی ان ملازمین کو کوئی دوسرا ذریعہ معاش ہے۔متاثرہ ٹیچرز نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ نجی تعلیمی اداروں کے اساتذہ اور دیگر ملازمین کو ماہانہ تنخواہوں کی ادائیگی کے لئے خصوصی مالی پیکج منظور کیا جائے۔

مطالبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -