نیٹ ورک مسائل‘ یونیورسٹی طلباء کا آن لائن کلاسز کیخلاف احتجاج

  نیٹ ورک مسائل‘ یونیورسٹی طلباء کا آن لائن کلاسز کیخلاف احتجاج

  

شادن لُنڈ (نمائندہ پاکستان) یونیورسٹی طلباء نے آن لائن کلاسز کے(بقیہ نمبر41صفحہ6پر)

خلاف احتجاج شروع کردیا۔ تفصیلات کے مطابق شادن لُنڈ میں متعدد یو نیورسٹی طلباء جن میں عدنان حیدرانی، محمد تبسم طارق، مدثر حیدرانی،سبطین نیازی،اسد لُنڈ، محمد عامر، احتشام رفیق، ابوہریرہ احمدانی،عبداللہ احمدانی اسامہ خان و دیگر شامل تھے نے احتجاج کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ آن لائن کلاسز کا ڈرامہ بند کیا جائے کیونکہ اکثر علاقوں میں انٹرنیٹ سہولت نہ ہونے کے باعث طلباء وطالبات مشکلات کا شکار ہیں کیونکہ ان کی تعلیم متاثر ہو رہی ہے طلباء کا مطالبہ ہے کہ آن لائن کلاسز کا بہترنظام وضع کرنے تک سکولوں اور کالجوں کی طرح یونیورسٹی طلباء کو بھی اگلے سمسٹر میں پرموٹ کیا جائے انہوں نے مزید کہا کہ یونیورسٹی کیمپس اور اس کی دیگر سہولیات طلباء کی دسترس میں نہیں تو ٹیوشن فیس کے علاوہ طلباء سے بھاری رقوم کیوں وصول کی جارہی ہیں ریاست ایک طرف کہتی ہے کہ ہم محروم علاقوں اور طبقات کو برابر لانا چاہتے ہیں تو دوسری طرف آن لائن کلاسز کی غیر حقیقی پالیسی نافذ کر کے انہیں تعلیم سے محروم رکھا جا رہا ہے جو اسٹوڈنٹس کے ساتھ بہت بڑی زیادتی ہے لہذٰا ان لائن کلاسز کا سلسلہ ختم کیا جائے بصورت دیگر ملک بھر میں احتجاج کرنے پر مجبور ہوں گے۔

احتجاج

مزید :

ملتان صفحہ آخر -