پبلک ہیلتھ انجینئرنگ افسروں کو تشدد کانشانہ بنانے کامقدمہ، سماعت آج تک ملتوی

پبلک ہیلتھ انجینئرنگ افسروں کو تشدد کانشانہ بنانے کامقدمہ، سماعت آج تک ...

  

ملتان ( خصو صی رپورٹر  ) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نمبر دو ملتان نے پبلک ہیلتھ انجینئرنگ کے (بقیہ نمبر37صفحہ6پر)

افسران کو تشدد کا نشانہ بنانے والے مبینہ دہشتگردوں کے خلاف ناقص انکوائری کرنے والے انسپکٹر اور اسسٹنٹ سب انسپکٹر کے خلاف کیس کی سماعت زبانی اور دستاویزی ثبوت پیش کرنے کے لیے آج 17 جون تک ملتوی کردی ہے۔ قبل ازیں پولیس اہلکاروں کے تحریری بیان سے غیر مطمئن ہوتے ہوئے عدالت نے فرد جرم عائد کردی تھی۔ فاضل عدالت میں پولیس تھانہ صدر وہاڑی کے پیش کیے گئے استغاثہ کے مطابق کمیونٹی ڈویلپمنٹ آفیسر پبلک ہیلتھ انجینئرنگ نعیم احمد نے 3 نومبر 2018 کو مقدمہ درج کرایا۔ جس میں الزام عائد کیا گیا کہ ملزمان صدیق وغیرہ جو مین پائپ لائن سے پانی چوری کررہے تھے انہیں روکنے کے لیے سرکاری افسران و اہلکاروں کی ٹیم موقع پر پہنچی تو 50 سے 60 ملزمان نے ٹیم پر حملہ کیا اور ڈنڈے، سوٹوں، پمپ ایکشن لہراتے ہوئے حملہ کردیا جس سے کئی اہلکار زخمی ہوئے اور علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا تھا۔ جس پر انکوائری کی گئی۔یاد رہے کہ انسپکٹر و انچارج اے ٹی اے کیسز محمد ذاکر اور اسسٹنٹ سب انسپکٹر قیصر منظور کو شو کاز نوٹس بھی جاری ہوچکا ہے۔

مقدمہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -